آزادی کا مہینہ آن پہنچا

آزادی کا مہینہ آن پہنچا
 آزادی کا مہینہ آن پہنچا

  



ہیلو میرے پیارے پیارے دوستو سنائیں کیسے ہیں امید ہے کہ اچھے ہی ہونگے ، جی دوستو آپ کو پتہ ہے نہ کہ آزادی کا مہینہ آن پہنچا ، جی ہاں ،چودہ اگست ہماری آزادی کا دن ہے ، 14 اگست کی تاریخ آج بھی ہماری ملی تاریخ میں سنہرے حروف میں لکھی جاتی ہے، ایک دفعہ پھر چودہ اگست آنے والی ہے ۔جس کے لئے ابھی سے بھرپور تیاریاں شروع ہو چکی ہیں۔۔۔پاکستانی قوم ایک دفعہ پھر جشن آزادی کی تیاریوں میں مصروف ہے،ملک بھر میں گلیوں ،محلوں،بازاروں میں قومی پرچم اور رنگا رنگ جھنڈیاں لہرانے کا کام شروع ہو چکا، اور خاص کر ہمارے نوجوانوں اور بچوں کا جوش و جذبہ دیدنی ہے ، آپ کو یہ بھی بتلاتے چلیں کہ مسلمانوں کو الگ وطن دلوانے میں جناب قائد اعظم اور انکے رفقاء نے بہت قربانیاں دیں ۔

یہ حقیقت روز روشن کی طرح عیاں ہے کہ ہمارا پیارا ملک پاکستان ؂ راتوں رات وجود میں نہیں آیا، بلکہ جناب قائد اعظم اور انکے ساتھیوں کی شب و روز محنت اور لاکھوں قربانیاں دے کر حاصل ہوا ، یہ بھی بتلاتے چلیں کہ شاعر مشرق حضرت علامہ اقبال نے ایک آزاد الگ اسلامی ریاست کا نظریہ پیش کیا ، یہ نظریہ انھوں نے خطبہ الہ باد میں پیش کیا ، پھر اس کے بعد قرارداد پاکستان بھی منظور کی گئی جو منٹو پارک میں ہوئی جہاں آج مینار پاکستان موجود ہے ۔۔۔ مسلمانوں کے لئے الگ وطن بنانے کی ضرورت اس لئے بھی محسوس ہوئی کہ جناب قائداعظم سمجھتے تھے کہ ہندو و مسلمان دو الگ الگ قومیں ہیں جن کا تشخص، تہذیب و تمدن ثقافت روایات الگ الگ ہیں اور انہی خیالات کے پیش نظر جناب قائد اعظم نے دو قومی نظریہ پیش کیا ۔

آج ایک دفعہ پھر تمام پاکستانی قوم جشن آزادی کی تیاریوں میں مصروف ہے ، تاہم سرکاری سطح پر بھی جشن آزادی کی تقریبات کا آغاز کر دیا گیا، اور نہ صرف یہ بلکہ مختلف سیاسی جماعتوں کی طرف سے بھی جشن آزادی منانے کی تیاریاں عروج پر پہنچ چکی ہیں، بہرحال اب ایک دفعہ پھر ہم سب پاکستانی یک جان ویک دل ہو کر جشن آزادی منا رہے ہیں اور ہماری دعا یہی ہے کہ ہم سب جشن آزادی مناتے ہوئے بانی پاکستان جناب قائد اعظم اور انکے رفقاء کے نظریات پر بھی عمل کریں تاکہ ہم نہ صرف ایک اچھے اور سچے پاکستانی بن سکیں بلکہ ہمارا شمار بھی ترقی یافتہ قوموں میں ہو سکے ، بہر حال اجازت چاہتے ہیں پیارے دوستو آپ سے ملتے ہیں جلد ایک بریک کے بعد تو چلتے چلتے اللہ نگہبان، رب راکھا ۔

مزید : کالم