بجلی قیمتوں نئے سرچارجز سے عوام پر120ارب روپے کا بوجھ ڈال دیا گیا،بلال شیرازی

بجلی قیمتوں نئے سرچارجز سے عوام پر120ارب روپے کا بوجھ ڈال دیا گیا،بلال شیرازی

  



لاہور(جنرل رپورٹر) پاکستان مسلم لیگ ق کے رہنما و مسلم لیگ یوتھ ونگ کے مرکزی صدر سید بلال مصطفی شیرازی نے کہا ہے کہ بجلی کے بلوں میں 2نئے سرچارج فنانشل کاسٹ سرچارج اور ٹیرف ریشنلائزیشن سرچارج کی مد میں بجلی کی قیمتوں میں 3روپے فی یونٹ اضافہ سے عوام پر120ارب روپے کا بوجھ ڈال دیا گیا ہے انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی سطح پر پٹرولیم مصنوعات میں مسلسل کمی واقع ہورہی ہے اس لیے فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی کی قیمتوں میں کمی کی جانی چاہیے تھی لیکن کمی کی بجائے اضافہ کردیا گیا انہوں نے کہا کہ بجلی بلوں میں نت نئے سرچارج کی مدوں میں اضافے غیر قانونی اور عوام پر ظلم ہیں۔انہوں نے کہا کہ مہنگی بجلی اور سرچارج کی مدوں میں اضافوں کے باعث پچھلے ماہ بجلی کے بلوں میں دوگنا اضافہ ہوگیا تھا عوام ابھی اس پر سنبھلنے بھی نہ پائے تھے کہ پھر دو نئے سرچارج کی مد میں ان پر فی یونٹ3روپے اضافہ کردیا گیا ۔سید بلال مصطفی شیراز ی نے کہا کہ بجلی بلوں میں نئے سال سے اضافے منی بجٹ ہیں ٹیکس فری بجٹ پیش کرکے عوام سے فراڈ کیا گیا اور بجٹ کے فوراً بعد ہی قیمتوں میں اضافے کرکے مسلسل منی بجٹ پیش کیے جارہے ہیں جو عوام کے لیے ناقابل قبول ہیں ۔انہوں نے کہا کہ بجلی کی قیمتوں میں سرچارج کی مد میں عوام پر120ارب روپے بوجھ ڈال کر وزارت پانی و بجلی کا یہ دعویٰ کہ نئے ٹیکسز کے نفاذ کے باوجود گھریلو صارفین پر اس کا بوجھ نہیں پڑے گا عوام سے سنگین مذاق ہے

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...