وسطی شامی علاقے پرداعش کے قبضے کے بعد سینکڑوں مسیحیوں کی نقل مکانی

وسطی شامی علاقے پرداعش کے قبضے کے بعد سینکڑوں مسیحیوں کی نقل مکانی

  



دمشق(آئی این پی )وسطی شامی علاقے قراطین پر شدت پسند تنظیم ’اسلامک اسٹیٹ‘ کے قبضے کے بعد سینکڑوں مسیحی باشندے گھر بار چھوڑنے پر مجبور ہو گئے ، مسیحی شہری حما اور دمشق منتقل ہو رہے ہیں۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق ’اسلامک اسٹیٹ‘ کی جانب سے وسطی شام میں یہ پیش قدمی ایک ایسے موقع پر کی گئی ہے، جب اتوار کے روز امریکی قیادت میں بین الاقوامی اتحاد کی اس دہشت گرد تنظیم کے خلاف فضائی کارروائیوں کو بھی ایک برس بھی مکمل ہو گیا ہے۔

اس ایک برس میں اتحادی طیاروں نے ’اسلامک اسٹیٹ‘ کے خلاف چھ ہزار فضائی حملے کیے، جن میں ہزاروں عسکریت پسند ہلاک کر دیے گئے، تاہم اس شدت پسند تنظیم کی کارروائیوں میں کوئی کمی دکھائی نہیں دیتی۔

مزید : عالمی منظر


loading...