بھارت میں 10سالہ طالبہ سے چلتی بس میں زیادتی کی کوشش

بھارت میں 10سالہ طالبہ سے چلتی بس میں زیادتی کی کوشش

  



رانچی /نئی دہلی (آئی این پی)بھارت میں چلتی بس کے اندر لڑکی سے زیادتی کا ایک اور واقعہ سامنے آ گیا،ریاست جھارکھنڈ میں چلتی بس میں 10سالہ طالبہ سے زیادتی کی کوشش کی گی ،بچی شدید خوف کے عالم میں چیخ و پکار کرتے ہوئے بس سے کود گئی جسے شدید زخمی حالت میں مقا می ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست جھارکھنڈ میں چلتی بس میں 10سالہ طالبہ سے زیادتی کی کوشش کی گی جس پربچی شدید خوف کے عالم میں چیخ و پکار کرتے ہوئی چلتی بس سے کود گئی۔حکام کا کہنا ہے کہ کم سن طالبہ کو شدید زخمی حالت میں مقا می ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔پولیس حکام کاکہنا ہے کہ ملزمان کی گرفتاری کیلئے کوشش جاری ہیں جبکہ واقعے کی تحقیقات شروع کردی گئی ہیں۔یاد رہے چند سال پہلے نئی دہلی میں میڈیکل کی طالبہ سے بدترین اجتماعی زیادتی کے بعد بھارت بھر میں شدید مظاہرے شروع ہو گئے تھے جس کے بعد زیادتی کے مرتکب افراد کیخلاف سزائیں سخت کئے جانے کے قانون بنے لیکن یہ سب کچھ بے سود رہا کیونکہ بھارت میں دہلی اجتماعی گینگ ریپ کے بعد بھی چندی گڑھ ، ممبئی اور اب جھارکھنڈ سمیت مختلف علاقوں میں چلتی بس کے اندر خواتین اور لڑکیوں سے زیادتی کے واقعات سامنے آ چکے ہیں۔بھارت میں خواتین کو کوئی تحفظ حاصل نہیں ، وہاں زیادتی اور قتل کے واقعات عام ہیں ، گذشتہ روز جھارکھنڈ کے ہی ایک گاؤں میں دیہاتیوں نے پانچ خواتین پر کالے جادو کا الزام لگا کر بیدردی سے قتل کر دیا۔دیہاتی انہیں مارنے سے پہلے گلیوں میں گھیسٹتے اور ڈنڈے مارتے رہے۔

مزید : عالمی منظر


loading...