کروڑوں روپے کے فراڈ کا الزام ،نیب پنجاب نے پیپلز پارٹی کے سینیٹر سیف اللہ کے بیٹے کو گرفتار کر لیا

کروڑوں روپے کے فراڈ کا الزام ،نیب پنجاب نے پیپلز پارٹی کے سینیٹر سیف اللہ کے ...

  



لاہور( خبرنگار) نیب پنجاب نے کروڑوں کے فراڈ میں پیپلز پارٹی کے سینیٹر سیف اللہ بنگش کے بیٹے شوکت علی بنگش کوگرفتار کر لیا ہے۔ نیب پنجاب کے ڈائریکٹر جنرل میجر (ر) سید برہان علی کے مطابق گرفتار ہونے والے شوکت علی بنگش پر کروڑوں روپے مالیت کی پراپرٹی قصر ذوق میرج ہال کو غیر قانونی طور پر فروخت کروانے کا الزام تھا شادی ہال کی اس پراپرٹی کو نیب پنجاب نے ایک دوسرے کیس سیٹھ ایوب کے سیکنڈل میں ضبط کر رکھا تھا اور فروخت کرنے پر پابندی لگا رکھی تھی ، لیکن ملزم شوکت علی بنگش اور اس کے پندرہ سے زائد ساتھیوں نے اس پراپرٹی کو غیر قانونی طور پر کروڑوں روپے میں فروخت کر کے رقم خوردبرد کر لی تھی۔ جس پر نیب نے گھیرا تنگ کیا تو شوکت علی بنگش کے پندرہ سے زائد ساتھیوں نے نیب کو رضاکارانہ طور پر خورد برد کی گئی رقم واپس کر دی جبکہ اس کیس میں شوکت علی بنگش مفرور تھا اور پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما سیف اللہ بنگش کا بیٹا ہونے کے ناطے سیاسی اثرورسوخ کے باعث بچ رہا تھا۔ جس پر نیب گزشتہ روز شوکت علی بنگش کو 5 کروڑو 25 لاکھ کے لینڈ فراڈ میں مفرور ہونے پر گرفتارکر لیا ہے نیب کے ترجمان جہانزیب چٹھہ کے مطابق گرفتار ملزم شوکت علی بنگش کو آج نیب کی عدالت میں پیش کیا جائے گا اور نیب عدالت سے ملزم کا جسمانی ریمانڈ حاصل کر کے ریکوری کی جائے گی۔

مزید : صفحہ اول