بچوں سے بداخلاقی کرنیوالوں کو نشان عبرت بنا دیا جائے، شجاعت حسین

بچوں سے بداخلاقی کرنیوالوں کو نشان عبرت بنا دیا جائے، شجاعت حسین

  



لاہور(سٹی رپورٹر) پاکستان مسلم لیگ کے صدر و سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین نے کہا ہے کہ بچوں سے زیادتی کرنے والوں کو پپو کیس کی طرح نشان عبرت بنا دیا جائے۔ انہوں نے سانحہ قصور کو حکومت کی ناکامی کا ایک اور منہ بولتا ثبوت قرار دیتے ہوئے کہا کہ بچوں کے تحفظ کیلئے پنجاب میں چودھری پرویزالٰہی حکومت کی جانب سے قائم کردہ چائلڈ پروٹیکشن بیورو کو ان کے دور کی طرح فعال کیا جائے، یہ صرف نمائش کیلئے نہیں بنایا گیا تھا بلکہ اس کا ایک مؤثر چارٹر ہے جس پر عمل کیا جائے۔ چودھری شجاعت حسین نے میڈیا سے گفتگو کے دوران صحافیوں کے سوالات کے جواب میں مزید کہا کہ ضیاء الحق مرحوم کے دور میں پپو زیادتی کیس کے مجرم کو چوبرجی چوک لاہور میں پھانسی پر لٹکا دیا گیا تھا جس کے بعد سالوں تک ایسا کوئی واقعہ پیش نہیں آیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ ایسے واقعات کی مذمتوں سے کچھ نہیں ہو گا اور نہ ہی انکوائریوں یا جوڈیشل کمیشن سے کچھ حاصل ہو گا، ایسا گھناؤنا جرم کرنے والوں پر فوجی عدالت میں مقدمہ چلا کر فوری انصاف کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ قاعدے اور قانون کی باتیں کرنے والوں کے اپنے بچوں کے ساتھ خدانخواستہ اگر ایسا ہو تو پھر قاعدہ اور قانون کہاں جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ قصور زیادتی کیس میں جو لوگ ملوث ہیں ان پر جرم ثابت ہو جائے تو ان کو کلمہ چوک لاہور میں سرعام پھانسی دی جائے کیونکہ جب تک مجرموں کو سزا نہیں ملے گی زیادتی کا نشانہ بنائے گئے بچوں کے والدین تڑپتے رہیں گے

مزید : صفحہ آخر


loading...