سانحہ قصور کا مقدمہ فوجی عدالت میں چلایا جائے ،عوامی تحریک کا مطالبہ

سانحہ قصور کا مقدمہ فوجی عدالت میں چلایا جائے ،عوامی تحریک کا مطالبہ

  



لاہور(آن لائن) عوامی تحریک کے رہنماؤں کے وفد نے ضلع قصور کے متاثرہ گاؤں کا دورہ کیا،واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کی اور مطالبہ کیا کہ سانحہ قصور کا کیس فوجی عدالت میں بھجوایا جائے ،اور پنجاب رینجرز کے حوالے کیا جائے ۔پنجاب حکومت عوام کے جان و مال کے تحفظ میں بری طرح ناکام ہو چکی ،وزیر اعلیٰ نے 48گھنٹے گزر جانے کے بعد بھی متاثرہ خاندانوں سے ملاقات نہ کر کے بے حسی اور سفاکیت دکھائی،وفد کی قیادت پاکستان عوامی تحریک کے چیف کوآرڈینیٹر میجر (ر) محمد سعید نے کی ۔رہنماؤں نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ 6سال سے بربریت ہو رہی تھی ،قوم کے بچوں اور بچیوں کی عزتیں پامال کی جا رہی تھیں اور پولیس نے ہمیشہ کی طرح ضمیر فروشی کی اور اس جرم کی سرپرستی کی ،پنجاب پولیس نے اس سکینڈل میں بھی اپنی روایات کو زندہ رکھتے ہوئے مظلوموں کی بجائے ظالموں کا ساتھ دیا ،رہنماؤں نے مطالبہ کیا کہ تفتیش کا عمل شروع ہونے سے پہلے ہی وزیر لا قانون رانا ثناء اللہ اور ڈی پی او نے اراضی کا جھگڑا قرار دے کر اس سنگین جرم کو چھپانے کی کوشش کی ،انکے اس موقف کے بعد یہ واضح ہو چکا ہے کہ پنجاب پولیس اور پنجاب حکومت انصاف نہیں ہونے دے گی لہذا اس دہشت گردی کے کیس کو فوجی عدالت میں بھجوایا جائے اور گذشتہ 6سال میں ڈسٹرکٹ قصور میں اس علاقہ کی بیٹ کے جو افسران یہاں تعینات رہے انہیں شامل تفتیش کیا جائے ۔

عوامی تحریک

مزید : صفحہ آخر


loading...