صوبائی حکومت کا پنجاب فوڈ اتھارٹی کا دائرہ کار وضع کرنے کا فیصلہ

صوبائی حکومت کا پنجاب فوڈ اتھارٹی کا دائرہ کار وضع کرنے کا فیصلہ

  



لاہور(اے این این )صوبائی حکومت نے پنجاب فوڈ اتھارٹی کا دائرہ کار وضع کرنے کا فیصلہ کیا ہے اس کے ساتھ ساتھ ملاوٹ سے پاک اشیاء کی فراہمی کے لئے قوانین میں بہتری لائی جا رہی ہے تا کہ لوگوں کو صحت مند اشیاء میسر آئیں۔ اس طرح ہوٹلنگ کے کاروبار میں انٹرنیشنل سٹینڈرڈز کو متعارف کرانے سے پاکستان کا عالمی امیج بہتر ہو گا ۔ یہ بات صوبائی وزیر خوراک بلال یاسین نے پروفیشنل ڈویلپمنٹ ڈیپارٹمنٹ میں تربیتی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر سیکرٹری خوراک ، ڈائریکٹر جنرل فوڈ اتھارٹی و دیگر حکام کے علاوہ فوڈ اتھارٹی ، محکمہ خوراک، یونیورسٹی آف ویٹرنری سائنسزکے ماہرین نے شرکت کی۔سیشن سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر نے کہا کہ ہوٹلنگ میں معیار ، حفظان صحت اور صفائی کو یقینی بنانے سے لوگوں کو اعتماد کی ترغیب ملے گی کہ وہ ہوٹلنگ کریں اوراس شعبہ سے وابستہ لوگوں کا کاروبار ترقی کرے گا۔انہوں نے کہا کہ چھوٹے کاروباری افراد کے لئے بھی قوانین میں ترامیم کی جا رہی ہیں تا کہ ان کے لئے آسانیاں پیدا ہوں۔ اس موقع پر ڈی جی فوڈ اتھارٹی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حفظان صحت سے متعلق سٹینڈرڈز وضع کئے جا رہے ہیں اور چیکنگ کے نظام میں بھی تبدیلیاں لائی جا رہی ہیں تا کہ ہوٹلز وفوڈ پروڈکشن کو سائنٹفیک طریقہ کے تحت چیک کیا جائے۔ قوانین میں تبدیلیا ں لانے سے نہ صرف فوڈ سیفٹی بارے شعور اجاگر ہو گا بلکہ عام آدمی تک حفظان صحت کے مطابق اشیائے خوردو نوش انہیں مہیا ہوں گی۔انہوں نے کہا کہ فوڈ اتھارٹی کے دائرہ کار کو پورے صوبہ میں پھیلایا جا رہا ہے اور اس میں حفظان صحت کے سٹینڈرڈز کو معیار بنایا جائے گا تا کہ لوگوں کو صحت مند اشیاء مہیا ہوں۔انہوں نے کہا کہ حکومت کے مثبت اقدامات کا مقصد لوگوں میں نہ صرف کھانے پینے کی اشیاء سے متعلق اعتماد بحال کرنا ہے بلکہ کھانے پینے کے کاروبار کو بھی بڑھانا ہے جس سے ملک میں معاشی ترقی ہو گی اور معیار زندگی بھی بلند ہو گا ۔

مزید : صفحہ آخر


loading...