کوئی پاکستانی بھارت سے مدد نہیں مانگ سکتا ،الطاف حسین کے پاکستانی ہونے پر شک ہے،خواجہ آصف

کوئی پاکستانی بھارت سے مدد نہیں مانگ سکتا ،الطاف حسین کے پاکستانی ہونے پر شک ...

  



 سیالکوٹ(اے این این) وزیر دفاع خواجہ محمد آصف نے کہا ہے کہ بھارت اپنے اندرونی معاملات پاکستان پر مسلط کرنے کے لئے غلط اور جھوٹے الزمات کا سہارا لیتا ہے،پڑوسی ملک کی36ریاستوں میں آزادی کی تحریکیں چل رہی ہیں،ایسے دشمن سے ہوشیار رہنا چاہیے جو ہر معاملہ بغیر ثبوت اور تحقیق کے پاکستان سے جوڑ دیتا ہے،اودھم پور حملے کے الزام میں گرفتار بس کنڈیکٹر بھی مقامی نکلا ہے،الطاف حسین کے پاکستانی ہونے پر شک ہے،جو دشمن ملک سے مدد مانگے اسے خود بھی سوچنا چاہیے،کوئی پاکستانی بھارت سے مدد کا سوچ بھی نہیں سکتا۔سیالکوٹ میں اپنی رہائش گاہ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ بھارت میں آزادی کی 36تحریکیں چل رہی ہیں ، اسی لئے بھا رت پاکستان پر غلط اور جھوٹے الزامات کا سہارا لیتا ہے ، ایسے دشمن سے چوکنا رہنا ہو گا ، بھارت انپی روایتی حرکتوں سے باز نہیں آتا ، اپنے اندرونی معاملات پاکستان پر مسلط کرنا چاہتا ہے ۔انھوں نے کہا کہ کہا کہ بھارت ہر معاملہ بغیر کسی تحقیق اور ثبوت پاکستان سے جوڑ دیتا ہے، اودھم پور حملے میں پاکستان کو ملوث کرنے کی کوشش کی گئی مگر اب ثابت ہو گیا ہے اس واقعہ کے الزام میں گرفتار جھلا بس کنڈیکٹر بھی مقامی نکلا ہے ،جسے فیصل آباد کا شہری بنایا جا رہا تھا۔اب بھارت کو منہ کی کھانی پڑی ہے ۔بھارت ہمیشہ جلد بازی کا مظاہرہ کرتا ہے اور پاکستان کو مورد الزام ٹھہراتا ہے اور بعد میں سبکی اٹھانا پڑتی ہے ۔ایسے دشمن سے چوکنا رہنے کی ضرورت ہے۔الطاف حسین کے حوالے سے خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ الطاف حسین کاپاکستانی ہونیکاشائبہ بھی نہیں ہے،کیوں کہ کوئی بھی پاکستانی دشمنوں سے مددنہیں مانگتا،اداروں سیاختلافات ہوتے ہیں لیکن دشمنوں کادروازہ کبھی نہیں کھٹکھٹایاجاتا،پاک فوج کی قربانیوں سے ہمارے گھر،محلے اورشہرمحفوظ ہوئے،پاک فوج کی قربانیوں کو ہمیشہ یادرکھناچاہیے۔پاک فوج کی خدمات ہماری قوم زندگی بھر نہیں بھلا سکتی۔

خواجہ آصف

مزید : صفحہ آخر