وہ خطرناک ترین وائرس جو صرف آواز کے ذریعے آپ کے کمپیوٹر میں داخل ہو سکتاہے،ایسا کیسے ممکن ہے؟حیرت انگیز حقیقت جانئے

وہ خطرناک ترین وائرس جو صرف آواز کے ذریعے آپ کے کمپیوٹر میں داخل ہو ...
وہ خطرناک ترین وائرس جو صرف آواز کے ذریعے آپ کے کمپیوٹر میں داخل ہو سکتاہے،ایسا کیسے ممکن ہے؟حیرت انگیز حقیقت جانئے

  



سان فرانسسکو(نیوزڈیسک)آپ نے اکثر سن رکھا ہوگاکہ کمپیوٹر کے وائرس کوئی پروگرام انسٹال کرنے یا کاپی کرنے پر پھیلتے ہیں لیکن اب ماہرین نے ایک حیران کرنے والا دعویٰ کردیا ہے جس میں انہوں نے ثابت کرکے بتایا ہے کہ کمپیوٹر وائرس مائیکروفون کے ذریعے پھیل سکتا ہے۔

ایک کمپیوٹر ماہر ڈراگوس ریﺅ کا کہنا ہے کہ تین سال قبل اس نے یہ چیز دیکھی کہ اس کے کمپیوٹر کسی وائرس کی زد میں ہیں اور وہ وائی فائی اور بلیوٹوتھ کے آن ہونے پر آپس میں بات چیت کررہے تھے۔اس کا کہنا ہے کہ نیٹ ورک کی کیبل نکالنے پر بھی کوئی اثر نہیں ہوا اور وہ آپس میں بات چیت جاری رکھے ہوئے ہیں۔تحقیق میں اس نے دیکھا کہ وائرس USBکے ذریعے کمپیوٹر کی BIOSمیں چلا جاتا ہے۔جس کے بعد وائرس کمپیوٹر کے سپیکروں اور مائیکروفونز کے ذریعے دیگر کمپیوٹروں کے ساتھ بات چیت کرتے ہیں جسے انسان نہیں سن سکتے۔اس وائرس کو badBIOSکا نام دیا گیاہے۔

ریﺅ کے اس دعویٰ نے دنیا بھر کو حیران کردیا تھا لیکن اب جرمنی کے Fraunhoferانسٹی ٹیوٹ آف کمیونیکیشن نے چند ثبوتوں کے ذریعے اس بات کی تصدیق کی ہے۔Journal of Communicationsمیں شائع ہونے والی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ کس طرح زیر سمندر دو کمپیوٹروں نے آواز کے ذریعے آپس میں بات چیت کی ہے۔

مزید : سائنس اور ٹیکنالوجی


loading...