نائن زیرو پر چھاپہ کسی کا پیچھا کرتے ہوئے مارا گیا تھا ،تفصیلات منظر عام پر لائیں گے : چوہدری نثار علی خان

نائن زیرو پر چھاپہ کسی کا پیچھا کرتے ہوئے مارا گیا تھا ،تفصیلات منظر عام پر ...
نائن زیرو پر چھاپہ کسی کا پیچھا کرتے ہوئے مارا گیا تھا ،تفصیلات منظر عام پر لائیں گے : چوہدری نثار علی خان

  



اسلام آباد ( مانیٹرنگ ڈیسک ) وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا ہے کہ ایم کیو ایم کے مرکز نائن زیرو پر کسی خاص ارادے کے تحت چھاپہ نہیں مارا گیا بلکہ وہ چھاپہ کسی کا پیچھا کرتے ہوئے مارا گیا تھا ۔ انہوں نے بتایا کہ رینجرز اہلکار جس شخص کے لیے وہاں گئے تھے اس کی تفصیلات جلد منظر عام پر لائی جائیں گی ۔

قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے چوہدری نثار علی خان کا کہنا تھا کہ کراچی میں جاری آپریشن صرف جرائم پیشہ افراد کے خلاف ہے اور پولیس اور رینجرز سمیت حکومت بھی ایم کیو ایم کے خلاف کوئی آپریشن نہیں کر رہی ۔چوہدری نثار علی خان کا کہنا تھا کہ آپریشن شروع ہونے سے قبل تمام سیاسی جماعتیں متفق تھیں لیکن اب صرف ایم کیو ایم کو اس آپریشن پر تحفظات ہیں ۔وفاقی وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ ایم کیو ایم کا اصل مسئلہ ان کے قائد الطاف حسین کی تقاریر ہیں اور متحدہ کے رہنماﺅں کو انہیں سمجھانا چاہیئے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ لندن سے بات کرنے والوں پر ایم کیو ایم کا کوئی کنٹرول نہیں ہے اور ایم کیو ایم کے معاملات کو بہتر ہونے میں وقت لگے گا ۔

چوہدری نثار علی خان نے کہا ہے کہ انہوں نے ایم کیو ایم رہنماءفاروق ستار کو سب معاملات سے آگاہ کیا تھا لیکن اب بھی کوئی بات کرنا چاہتا ہے تو اس معاملے پر کھل کر بات کی جائے گی اور اس میں کوئی لگی لپٹی بات نہیں ہو گی ۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں ایسے ماحول میں بات کرنے کی ضرورت ہے جس میں معاملات کو حل کیا جا سکے نہ کہ ایسا ماحول بنایا جائے جس سے معاملات مزید خراب ہوں ۔

ان کا کہنا تھا کہ ایم کیو ایم کی جانب سے دیے گئے تمام اعداد و شمار غلط اور حقائق سے بالکل مختلف ہیں ۔ گزشتہ 20 سالوں میں کراچی میں اتنا امن نہیں ہوا جتنا اس سال جولائی تک ہوا ہے ۔ وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ ٹارگٹڈ آپریشن کے دوران ہونے والی گرفتاریوں کے باعث ہی شہر قائد میں امن ممکن ہو سکا ہے ۔ ممبران اسمبلی کے حوالے سے چوہدری نثار علی خان کا کہنا تھا کہ کسی کو لاپتہ کرنے کی پالیسی حکومت کی نہیں ہے اور انہوں نے ڈی جی رینجرز کو بغیر اجازت ممبران اسمبلی کو گرفتار نہ کرنے کی ہدایات جاری کی ہیں ۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں


loading...