پی سی ایم اے کی کیمکلز میں خودکفالت کیلئے چین کیساتھ مشترکہ سرمایہ کاری کی کوششیں

پی سی ایم اے کی کیمکلز میں خودکفالت کیلئے چین کیساتھ مشترکہ سرمایہ کاری کی ...

 لاہور(کامرس رپورٹر)پاکستان کیمیکل مینوفیکچررز ایسوسی ایشن ( پی سی ایم اے) نے پاکستان کوکیمکلزکے حوالے سے ایک خود کفیل ملک بنانے کیلئے چین کے ساتھ مشترکہ سرمایہ کاری کی کوششیں شروع کر دی ہیں۔اس ضمن میں پاک چین جوائینٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر مسٹر وانگ زہائی کے ساتھ ایک ملاقات کے دوران پی سی ایم اے کے سیکرٹری جنرل اور چیف آپریٹنگ آفیسر اقبال قدوائی نے کیمیکل سیکٹر میں چینی سرمایہ کاروں کو راغب کرنے کیلئے مختلف تجاویز پر تبادلہءِ خیالات کیا۔ انہوں نے مسٹر وانگ زہائی کو بتا یا کہ پاکستان ہر سال مختلف قسم کے کیمیکلز کی درآمدات پر تقریباََچھ ۔ارب امریکی ڈالر کا خطیر زر مبادلہ خرچ کر رہا ہے جبکہ مقامی کیمیکل انڈسٹری کو نیفتھا کریکر کمپلیکس میسر ہو تو تمام تر کیمکلز کی تیاری نہ صرف اندرون ملک ممکن ہوسکتی ہے بلکہ متعدد کیمیکلز بیرون ملک ایکسپورٹ بھی کئے جاسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جدیددنیا کی بنیادی کیمکل انڈسٹری پر ہی استوار ہیں اور چین اس صنعت میں صف اول کے ملکوں میں شامل ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگرہم چینی سرمایہ کاروں کوکیمیکل کے شعبہ میں مقامی صنعتکاروں کے ساتھ اشتراک عمل پر راغب کر لیں تو پاکستان میں کیمیکلز کی درآمدات پر خرچ ہونے والے خطیر زرمبادلہ پچایا جا سکتا ہے۔ اقبال قدوائی نے پاک چین جوائینٹ چیمبر کے صدر کو تجویز پیش کی کہ چینی سرمایہ کاروں کی توجہ پاکستان کی کیمیکل انڈسٹری میں موجود کاروباری مواقع کی طرف مبذول کروانے کیلئے پی سی ایم ای اور پاک چین جوائینٹ چیمبر کے مشترکہ وفود چین بھجوائے جائیں نیز آئیندہ چین سے آنے والے سرمایہ کاری وفود کو پاکستان میں کیمیکل سازی کے شعبہ میں مشترکہ منصوبوں کی اہمیت کے بارے میں خصوصی طور پر آگاہ کیا جائے۔قبل ا زیں پاک چین جوائینٹ چیمبر کے صدر وانگ زہائی نے اس موقع پر پی سی ایم اے کو پاکستان کی کیمیکل انڈسٹری کے ترقی میں اپنے بھرپور تعاون کی یقین دہانی کرائی اور اس ضمن میں عمل پیش رفت کیلئے ایک سٹدی رپورٹ تشکیل دینے کی تجویز پیش کی۔ انہوں نے بتا یا کہ چین میں اس وقت کیمیکل انڈسٹری ملک کی تیسری بڑی صنعت کا درجہ رکھتی ہے اور چین کی جی ڈی پی کا 13 فیصدی حصہ اسی صنعت سے تعلق رکھتا ہے۔

انہوں نے اس امر پر اتفاق کیا کہ ترقی یافتہ دنیا کی ترقی میں کیمیکل انڈسٹری بنیادی اہمیت کی حامل ہے اور چین میں بھی تقریباََ تمام اقتصادی شعبے کیمیکل انڈسٹری کے مرہون منت ہیں،بالخصوص کنسٹرکشن اور آٹو انڈسٹری میں کیمکل مواداہم کردار انجام دے رہے ہیں۔انہوں نے پی سی ایم اے کی اس تجویز پر بھی اتفاق کیا کہ کیمیکل کی صنعت کو سی پیک کا حصہ بنایا جانا چاہیے۔ تاہم انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں ایک ٹھوس تحقیق پر مبنی ایک رپورٹ چین اور پاکستان کی حکومتوں کو پیش کی جانی چاہیے۔

مزید : کامرس