کشمیری اسیروں کے خلاف جاری جبرو تشدد و انتہائی بہیمانہ اور قابل مذمت ہے ‘ یاسین ملک

کشمیری اسیروں کے خلاف جاری جبرو تشدد و انتہائی بہیمانہ اور قابل مذمت ہے ‘ ...

سرینگر (آن لائن) جموں و کشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین یاسین ملک نے کہا ہے کہ کشمیری اسیروں کے خلاف جاری جبروتشدد انتہائی بہیماہ اور قابل مذمت ہے ہزاروں مرو زن ‘ بچے بوڑھے اور جوان جیلوں اور پولیس اسٹیشنوں کے اندر بھارتی جبر کا سامنا کر رہے ہیں اپنے ایک بیان میں انہوں نے کشمیری اسیروں کے حوالے سے روا رکھے جانے والے حکومتی رویئے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ 80 سالہ بزرگ سے لے کر 10 سالہ بچے اور خواتین تک سے جیل اور اذیت گاہین بھری پڑی ہین اور ان اسیروں پر بے انتہا مظالم ڈھانے کا سلسلہ دراز تر کیا جا رہا ہے دختران ملت کی سربراہ آسیہ اندرابی اور ان کی معاون فہمیدہ صوفی جو عرصہ دراز سے جموں جیل کی سختیاں برداشت کرنے پر مجبور ہیں کی مثال پیش کرتے ہوئے یاسین ملک نے کہا کہ محبوبہ مفتی حکومت نے ظلم و جبر اور دہشت کی ساری پرانی روایات کو مات دے دی ہے انہوں نے کہا کہ ہزاروں بڑے اور بچے بھارتی جیلوں اور اذیت گاہوں میں سختیاں برداشت کر رہے ہیں لیکن آئی سی آر سی یا دنیا کا کوئی بھی انسانی حقوق کا ادارہ ان کا پرسان حال نہیں بن رہا ۔ انہوں نے کہاکہ جیلوں میں اسیروں کی ناگفتہ بہ حالت کا یہ حال ہے کہ حال ہی میں کٹھوعہ جیل میں سبھی اسیروں کو الف ننگا کر کے مارا پیٹا گیا۔

یہی حال دوسری جیلوں اور اذیت گاہوں کا بھی ہے جہاں اسیروں کی زندگیوں کو سخت خطرات لاحق ہو چکے ہیں ۔ انہو ں نے کہا کہ حکمرانوں نے فوج ‘ فورسز اور پولیس کو جو کھلی چھوٹ دے رکھی ہے اس کا بھیانک چہرہ رفتہ رفتہ کھل کر سامنے آ رہا ہے ۔

مزید : عالمی منظر