ایٹمی معاہدے کی ناکامی پر دراصل شکست امریکا کی ہو گی: ایران

ایٹمی معاہدے کی ناکامی پر دراصل شکست امریکا کی ہو گی: ایران

تہران (اے پی پی) ایران کے ادارہ جوہری توانائی کے سربراہ ڈاکٹر علی اکبر صالحی نے کہا ہے ایٹمی معاہدے کی خلاف ورزی کی صورت میں اصل شکست امریکا کی ہوگی۔ارنا نیوز کے مطابق لبنان کے المیادین ٹیلی ویژن کو انٹرویو دیتے ہوئے ڈاکٹر علی اکبر صالحی نے کہا کہ ایٹمی معاہدہ ختم ہوا تو اس کی تمام تر ذمہ داری امریکا پرعائد ہوگی کیونکہ آئی اے ای اے نے اپنی سات متواتر رپورٹوں میں اس بات کی تصدیق کی ہے کہ ایران نے جامع ایٹمی معاہدے کی مکمل پاسداری کی ہے۔انہوں نے کہا کہ امریکا کی جانب سے یکطرفہ طور پر ایٹمی معاہدے سے دستبردار ہو جانے کی صورت میں معاہدے پر عملدرآمد متاثر نہیں ہوگا کیونکہ یورپی یونین، چین، روس اور دنیا بھر کی حکومتوں نے اس معاہدے کی توثیق کی ہے۔انہوں نے کہا کہ امریکا کی جانب سے ایٹمی معاہدے سے نکل جانے کی صورت میں تمام آپشن ایران کی میز پر ہوں گے اورایران امریکی اقدامات کے مطابق اس کا جواب دے گا۔واضح رہے کہ ایران اور پانچ جمع ایک گروپ کے درمیان طے پانے والے جامع ایٹمی معاہدے پر جنوری دو ہزار سولہ سے عملدرآمد شروع ہوا ہے۔

تاہم امریکی حکومت مسلسل اس کی خلاف ورزی کر رہی ہے۔

مزید : عالمی منظر