زرعی ٹیوب ویلوں کو سولر انرجی پر منتقل کرنے کی ہدایت،توانائی کے تحفظ کو یقینی بنانا حکومت کی اولین ترجیح ہے :وزیر اعظم

زرعی ٹیوب ویلوں کو سولر انرجی پر منتقل کرنے کی ہدایت،توانائی کے تحفظ کو ...

اسلام آباد (این این آئی)وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ توانائی کے تحفظ کو یقینی بنانا حکومت کی اولین ترجیح ہے اور صارفین کو صاف ستھری اور ارزاں بجلی کی فراہمی ترقی کی کلید ہے۔ بدھ کو توانائی کے شعبے کے مسائل کے بارے میں اجلاس کی صدارت کررہے تھے۔ اجلاس میں وزیر خزانہ اسحاق ڈار،وزیر مملکت پٹرولیم جام کمال اور سینئر حکام نے شرکت کی۔ سیکریٹری پاور ڈویژن نے موجودہ لوڈمینجمنٹ پلان، بجلی کے ترسیلی نظام سے متعلق مسائل اور گردشی قرضہ کے بارے میں بریفنگ دی۔وزیراعظم نے فنانس ڈویژن اور پاور ڈویژن کو ہدایت کی کہ کارکردگی میں بہتری اور غیر روایتی حل پر توجہ مرکوز کرتے ہوئے گردشی قرضہ کا باعث انفرادی عوامل کے تعین کے حوالے سے مل کر کام کریں۔ وزیراعظم نے یہ بھی ہدایت کی کہ ہر پاور ڈسٹری بیوشن کمپنی کو لائن لائسز میں کمی کے لئے قابل عمل حل کے ساتھ ان خسارہ جات کی وجوہات کے بارے میں رپورٹ پیش کرنی چاہیے۔ وزیراعظم نے زرعی ٹیوب ویلوں کو شمسی توانائی پر منتقل کرنے کے منصوبے کی بھی ہدایت کی تا کہ پائیدار بنیادوں پر بجلی کی فراہمی ہو سکے اور سبسڈی کا بوجھ کم ہو۔ انہوں نے کہا کہ یہ عمل ترجیحی طور پر صوبہ بلوچستان سے شروع کیا جائے گا۔دوسری طرف وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ پاکستان پر موسمیاتی تبدیلیوں کے اثرات کے پیش نظر حکومت کیلئے آبی تحفظ بنیادی تشویش کا معاملہ ہے، حکومت اس ضمن میں مسائل سے آگاہ ہے لہٰذا اس نے آبی وسائل کی الگ وزارت قائم کر دی ہے۔ وہ وزیر آبی وسائل سیّد جاوید علی شاہ سے بدھ کو وزیراعظم آفس میں گفتگو کررہے تھے ۔ وزیراعظم نے وزیر برائے آبی وسائل کو ہدایت کی کہ وہ نئے آبی ذخائر کیلئے منصوبہ بندی اور جاری منصوبہ جات پر تیزی سے عملدرآمد کے ذریعے ملک کے آبی ذخیرہ کی گنجائش بڑھانے کیلئے فعال اقدامات بروئے کار لائیں۔

مزید : صفحہ اول