آئی جی پنجاب اور ڈی پی او قصور کیخلاف اندراج مقدمہ کی درخواست

آئی جی پنجاب اور ڈی پی او قصور کیخلاف اندراج مقدمہ کی درخواست

لاہور(نامہ نگار)ایڈیشنل سیشن جج انواراللہ کی عدالت میں جعلی پولیس مقابلے میں شہری کو ہلاک کرنے والے ضلع قصورکے پولیس اہلکاروں کے خلاف مقدمہ درج نہ کرنے پر آئی جی پنجاب اور ڈی پی او قصور کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست دائر کردی ہے۔ عدالت میں مقتول مظہراقبال کے والد اور بھائی جعفر کو ان کے وکیل نے پیش کرتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ 28مارچ 2017ء کو قصورپولیس نے مظہراقبال کو شادباغ پولیس کی مدد سے اغوا ء کرلیا ،بعد میں اس کو قصورلے جا کر مبینہ طور پرجعلی پولیس مقابلے میں ہلاک کردیا ،ان کو اس وقت علم ہوا جب قصور پولیس نے نعش ان کے حوالے کی گئی ،مظہراقبال کے والد محمد سرور نے جعلی پولیس مقابلہ کرنے پر ایس ایچ او شادباغ کو قصور پولیس کے 13پولیس اہلکاروں کے خلاف اغوا اور قتل کا مقدمہ درج کرنے کی درخواست دی لیکن انہوں نے کارروائی نہیں کی ،بعد میں آئی جی پنجاب اور ڈی پی او قصور کو درخواست دی ،انہوں نے بھی بات نہ سنی ۔

 

مزید : علاقائی