تونسہ بیراج کا شرقی سلٹ ریجکیٹر ٹوٹ گیا، کئی بستیاں زیر آب

تونسہ بیراج کا شرقی سلٹ ریجکیٹر ٹوٹ گیا، کئی بستیاں زیر آب

کوٹ ادو،دائرہ دین پناہ(تحصیل رپورٹر،نامہ نگار)تونسہ بیراج کاشرقی سلٹ ریجکٹر پا نی کا دباؤ برداشت نہ کر تے ہوئے ٹوٹ گیا ،محکمہ انہار نے نچلے درجے کا سیلاب ہو نے کے باوجود نہر وں کو بند کرنے کی بجائے اس میں مقر رہ مقدار سے زائد پا نی چھوڑ دیا ،اور سپر فلڈ 2010کے بعد سے (بقیہ نمبر47صفحہ7پر )

بیراج ،بندوں اور نہری اسٹر یکچر کی تعمیرومرمت کے نام پر کروڑوں پر کے ٹھیکے ہر سال دیے گئے،پر اب تک سلٹ ریجکٹر کے کنارے مضبوط نہ کیئے جا سکے ،سلٹ ریجکٹر کے ٹو ٹنے سے بستی ،منجھوٹھہ ،بستی موہا نہ ،بستی کھوسہ ،بستی درکھانہ والی ، بستی پل مگسن سمیت کئی بستیاں زیر آب آگئیں ،مسجد ومدرسہ فاروقیہ بھی جہاں سینکڑوں بچے تعلیم حاصل کر نے جاتے ہیں ،وہ بھی اسے شدید متاثر ہوئے ،علاقے میں موجود سینکڑوں ایکڑ چاول ،کماد کی فصلیں اور آم کے با غات بھی پا نی میں ڈوبنے سے ضائع ہو گئے ، متا ثر ین ،محمد ایوب ،محمد عبداللہ ،عبد الرشید ،غلام رسول ،خان محمد ،سرادار خان منظور حسین اور محمد رمضان بھٹہ کا وزیر اعظم شاہد خاقان عبا سی اور وزیر اعلیٰ پنجاب شہبا ز شریف سے ذمہ داروں کے خلاف کاروائی اور مالی نقصان میں مد د کی اپیل کی ہے ۔

ریجیکٹر ٹوٹ گیا

مزید : ملتان صفحہ آخر