نوازشریف کی ریلی روکنے سے متعلق دائر درخواستیں ناقابل سماعت قرار دیکر خارج

نوازشریف کی ریلی روکنے سے متعلق دائر درخواستیں ناقابل سماعت قرار دیکر خارج

اسلام آباد(خصوصی رپورٹ)اسلام آباد ہائی کورٹ نے سابق وزیراعظم نوازشریف کی ریلی روکنے کے حوالے سے دائر درخواستیں ناقابل سماعت قرار دیکر خارج کردی۔منگل کے روز پی ٹی آئی کے وکیل عثمان بسرا کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کئے جانے کے بعد آل پاکستان مسلم لیگ کے کارکن وحید کمال کی جانب سے ایک اور درخواست دائر کی گئی جس میں سیکورٹی خدشات اور مال وجان کے نقصانات کے پیش نظر سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد نوازشریف کی ریلی روکنے کی استدعا کی گئی تھی۔دوسری درخواست دائر ہونے کے بعد اسلام آباد ہائی کورٹ کے سنگل رکنی بنچ پر مشتمل جسٹس عامرفاروق نے بعد کے روز دونوں درخواستوں پر فیصلہ سنائے جانے کا حکم دیا۔وحید کمال کی جانب سے دائردرخواست پر سماعت کے دوران ڈپٹی کمشنر اسلام آباد کی جانب سے دفعہ144کا نوٹیفکیشن بھی عدالت میں پیش کیا گیا۔آل پاکستان مسلم لیگ کے کارکن کے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا۔اسلام آباد ہائی کورٹ میں سابق وزیراعظم نوازشریف کی ریلی روکنے کے حوالے سے دائر درخواستوں میں وزارت داخلہ،ڈی جی آئی بی،سیکرٹری کابینہ ڈویژن ،چیف سیکرٹری پنجاب،چیف کمشنر اسلام آباد،آئی جی پنجاب اور اسلام آباد کو فریق بنایا گیا تھا۔سابق وزیراعظم کے پنجاب ہاؤس سے نکلتے ہی اسلام آباد ہائی کورٹ نے ریلی کو روکنے کے حوالے سے فیصلہ سناتے ہوئے دونوں درخواستوں کو ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے خارج کرنے کا حکم دیتے ہوئے کیس نمٹا دیا۔

درخواست خارج

مزید : صفحہ آخر