مسجد نبویؐ سے دور رہائشگاہ اور ناقص کھانے کی فراہمی پر سرکاری عازمین کا مظاہرہ

مسجد نبویؐ سے دور رہائشگاہ اور ناقص کھانے کی فراہمی پر سرکاری عازمین کا ...

لاہور(رپورٹ،ڈویلپمنٹ سیل)مدینہ منورہ میں سرکاری حج سکیم کے ایک ہزار سے زائد عازمین کا وزارت مذہبی امور کے خلاف احتجاجی مظاہرہ ،مسجد نبوی ؐسے ڈیڑھ سے دو کلو میٹر دور شارع عبد العزیز پر فندق الشرق الماسی میں رکھا گیا،دس دس بندوں کو ایک کمرے میں ٹھونس دیا گیا ہے ،کھانا غیر معیاری دیا جا رہا ہے،ٹرانسپورٹ کی سہولت نہیں ہے ،کمروں میں صفائی نہیں ہے حاجی بیمار ہونے لگے ہیں تین دن سے مسلسل احتجاج کر رہے ہیں کوئی شنوائی نہیں ہے عازمین کا کہنا ہے کہ ہم سے وعدہ کیا گیا تھا کہ مدینہ میں مرکز یہ ہوٹلز میں رکھیں گے مگر ایسا نہیں کیا گیا بزرگ مرد،خواتین عازمین سخت ترین گرمی میں ڈیڑھ سے دو کلو میٹر پیدل سفر کر کے مسجد نبوی ؐمیں جانے پر مجبور ہیں ہم نے تحریری درخواست ڈی جی حج کے نام 6اگست کی جمع کرائی ہوئی ہے جس پر ڈائریکٹر محمد فاروق نے رابطہ کیا تو کہتے ہیں ہم سے غلطی ہو گئی ہے ہنگامی طور پر عمارتیں حاصل کی تھیں اس لیے غلط عمارت لے بیٹھے ہیں ازالہ کریں گے ،کیا ازالہ کریں گے ابھی تک کچھ نہیں ہوا ہمارا ہوٹل تبدیل کیا جائے ورنہ ہمارا احتجاج جاری رہے گا ۔سرکاری عازمین میں حج2017ء کے لیے جانیو الے کامران امین گروپ نمبر204066بلڈنگ نمبر715،مکتب نمبر 95جو5اگست کو SV889کے ذریعے پاکستان سے مدینہ منورہ پہنچے تھے نے مدینہ منورہ سے اپنے ساتھیوں محمد ارشدپاسپورٹ نمبرEJ9846481محمد اشرف پاسپورٹ نمبرAL1844873شمائلہ اشرف پاسپورٹ نمبرAR1842443 کے ساتھ روزنامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا،انہوں نے کہا کہ آج چوتھا دن ہے ہم روزانہ احتجاج کر رہے ہیں کوئی کچھ سننے کے لیے تیار نہیں ہے ہم سے فراڈ کیا جا رہا ہے صبح دوپہر شام افسر آ رہے ہیں اور کہہ دیتے ہیں کہ آپ کا مسئلہ حل کر رہے ہیں اور ساتھ یہ بھی کہہ دیا جاتا ہے کہ غلط بلڈنگ حاصل کر لی گئی ہے معاف کر دیں۔محمد اشرف نے بتایا ہم نے تحریری درخواست بھی دے رکھی ہے درجنوں حاجیوں نے درخواست پر دستخط کر رکھے ہیں عمارت تبدیل کرنے تک احتجاج جاری رکھیں گے۔

مزید : صفحہ آخر