نمبر پلیٹ پہنچانے کی بجائے سینکڑوں گاڑی مالکان کے انتقال کی رپورٹیں جمع کرادیں

نمبر پلیٹ پہنچانے کی بجائے سینکڑوں گاڑی مالکان کے انتقال کی رپورٹیں جمع ...

لاہور (ارشد محمود گھمن/سپیشل رپورٹر) ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن مو ٹر رجسٹریشن برانچ لاہور کے چاروں زو ن میں نجی کوریئر کمپنی کے ملازمین کی جانب سے سینکڑوں گاڑیوں کے مالکان کے انتقال کی رپورٹ بھجوا نے کا انکشاف ہوا ہے ،یہی افرادجب محکمہ کے پاس اپنی گاڑی کے کاغذات، نمبر پلیٹ لینے جاتے ہیں تو محکمہ کی جانب سے کہا جاتا ہے کوریئر کمپنی نے توآپ کے انتقال کی رپورٹ بھجوائی ہے جس کی وجہ سے نمبر پلیٹ آپ تک نہیں پہنچ پائیں ۔ تفصیلات کے مطابق صوبائی دارالحکومت سمیت پنجاب بھر کے اضلاع سے آنے والے لوگوں کی روزانہ تقریباً 2500کاروں اور موٹرسائیکلوں کی نئی رجسٹریشن کی جارہی ہے جس کے عوض کمپیوٹرائزڈ نمبر پلیٹس کی مدمیں ہرماہ تقریباً7کروڑ روپے ریونیو اکھٹا ہورہا ہے ،اس کے باجودمحکمہ کے افسران اورنجی کوریئر کمپنی کی مبینہ ملی بھگت سے 2014ء سے ہزاروں موٹر سائیکلوں اور کاروں کے مالکان نئی کمپیوٹر نمبر پلیٹ کی فراہمی سے محروم ہیں ۔واضح رہے کہ محکمہ سائلین سے مذکورہ نمبر پلیٹ ان کی دہلیز پر پہنچانے کی مد میں فی کس1200جبکہ کوریئر کمپنی کو35روپے ادا کررہا ہے ،مذکورہ کمپنی کے ملازمین گاڑی مالکان کے پتوں پر بھجوانے کی بجائے گھر تبدیلی ، عدم پتہ اور گاڑی مالکان کے انتقال کی رپورٹ یاپھر کوئی اور وجہ بتاکر نمبر پلیٹ محکمہ کو واپس بھجوا دیتا ہے جبکہ ڈائریکٹر ریجن سی محمد آصف نے چپ کا روزہ رکھ لیاہے اورمذکورہ کمپنی کے خلاف 2014ء سے آج تک ایکشن لینے کی بجائے3سال کا معاہدہ پورا کرنے کے در پے ہیں ۔ ذرائع نے یہ بھی انکشاف کیا ہے کہ محکمہ کے ایک اہم آفیسر نے مذکورہ کمپنی سے بھاری کمیشن کے عوض معاہدہ کو جاری رکھا ہوا ہے ۔دوسری جانب نئی نمبر پلیٹس شہریوں کے پتوں پر نہ پہنچنے کی وجہ سے روزانہ پنجاب بھر کے دوردراز کے علاقوں سے آنے والے سیکڑو ں شہری محکمہ کے عملہ کومنہ مانگی رقم دینے پر مجبور جاتے ہیں، محکمہ کا کرپٹ عملہ گاڑی مالکان کو دونوں ہاتھوں سے لوٹنے میں مصروف ہے۔مذکورہ گاڑی مالکان جب شکایت کرنے ڈائریکٹر محمد آصف کے پاس جاتے ہیں تو وہ عملے کی کوتاہی پر پردہ ڈالنے کے لئے انہیں کسی نہ کسی طرح ’’رام "کرلیتے ہیں ، محکمہ کے افسران نے ساراملبہ نجی کوریئر کمپنی اور گاڑی مالکان کے غلط ایڈریس وجہ قرار دے کر ان ہی کے اوپر ڈالنا معمول بنا لیا ہے ۔اس ضمن میں موٹر گاڑیوں کے مالکان جاوید اقبال ،نبی احمد،محمد یو سف،صغیر احمد،بلال احمد،احتشام الحق، ز بیر حیات وغیرہ نے وزیراعلیُ شہباز شریف اور چیف سیکرٹری زاہد سعید سے فوری طور پر ذمہ دارافسران کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے ۔جب اس حوالے سے موقف دریافت کرنے کیلئے ڈائریکٹرمحمد آصف سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ ذمہ دارا عملہ کے خلاف کارروائی ہوگی،مذکورہ کمپنی کے متعلق کا فی شکا یات آ رہی ہیں اس حوالے سے اعلیٰ افسران کو آگاہ کیا جا چکا ہے۔

مزید : صفحہ آخر