سعودی گلوکار نے کنسرٹ کے دوران ایک ایسا اشارہ کردیا کہ حکومت نے پکڑ کر جیل میں ڈال دیا، ایسا کیا اشارہ تھا؟ جان کر آپ کو اس سزا کا یقین نہ آئے گا

سعودی گلوکار نے کنسرٹ کے دوران ایک ایسا اشارہ کردیا کہ حکومت نے پکڑ کر جیل ...
سعودی گلوکار نے کنسرٹ کے دوران ایک ایسا اشارہ کردیا کہ حکومت نے پکڑ کر جیل میں ڈال دیا، ایسا کیا اشارہ تھا؟ جان کر آپ کو اس سزا کا یقین نہ آئے گا

  

ریاض(مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب میں منشیات کے خلاف قوانین کتنے سخت ہیں یہ تو سب ہی جانتے ہیں لیکن یہ بات اکثر لوگ نہیں جانتے کہ محض نشہ کرنے کی اداکاری بھی گرفتاری کا سبب بن سکتی ہے۔ یہ حیران کن واقعہ ایک مشہور سعودی گلوکار کے ساتھ پیش آیا ہے جسے ایک میوزک کنسرٹ کے دوران نشیلی ایکٹنگ کرنے پر گرفتار کر لیا گیا ہے۔

سعودی گلوکار نے کنسرٹ کے دوران ایک ایسا اشارہ کردیا کہ حکومت نے پکڑ کر جیل میں ڈال دیا، ایسا کیا اشارہ تھا؟ جان کر آپ کو اس سزا کا یقین نہ آئے گا

روزنامہ اوکاز کی رپورٹ کے مطابق عبداللہ الشہرانی نام گلوگار طائف صوبے میں ایک میوزک کنسرٹ کے دوران پرفارم کر رہے تھے۔ انہوں نے گانے کے دوران ایک ایسا ڈانس سٹیپ کیا جسے عمومی طور پر نشہ بازی کی علامت سمجھا جاتا ہے اور ملک کا انسداد منشیات کا ادارہ اسے جرم قرار دیتا ہے۔ ایک بازو کو خم دے کر اور سر کو جھکا کر خود کو نشے میں دھت ظاہر کرنے والا یہ سٹیپ آج کل دنیا بھر میں مقبول ہو رہا ہے لیکن سعودی عرب میں یہ سختی سے ممنوع ہے۔

گلوگار کی ویڈیو سوشل میڈیا پر سامنے آنے کے بعد انہیں سخت تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ انہوں نے اپنے پرستاروں سے معذرت کرتے ہوئے ایک بیان میں کہا ”میں طائف کے کنسرٹ میں غیر ارادی طور پر متنازع ڈانس سٹیپ کر بیٹھنے پر قابل احترام حکومت اور اپنے سامعین سے معذرت طلب کرتا ہوں۔ “ اگرچہ انہوں نے معذرت تو کر لی ہے لیکن لوگ کافی برہم ہیں اور ان پر تنقید کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔

مزید : عرب دنیا