لاہور پولیس کا انو کھا کارنامہ، پنجاب یونیورسٹی کے طلبا کو دہشتگرد بنا دیا

لاہور پولیس کا انو کھا کارنامہ، پنجاب یونیورسٹی کے طلبا کو دہشتگرد بنا دیا
لاہور پولیس کا انو کھا کارنامہ، پنجاب یونیورسٹی کے طلبا کو دہشتگرد بنا دیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) لاہور پولیس کا انو کھا کارنامہ، ویب سائٹ پر جنوری میں پنجاب یونیورسٹی میں لڑائی کے مقدمے میں ملوث اکیس بلوچ اور پختون طلبا کو خطرناک دہشت گرد بنا دیا۔

 لاہور پولیس نے 6 ماہ پہلے پنجاب یونیورسٹی میں ہونے والے مقدمے میں ملوث بلوچ اور پختون طلبا کو خطرناک دہشت گرد بنا کر ان کی تصاویر پولیس کی سرکاری ویب سائٹ پر آویزاں کردی ہیں۔ ان طلبا میں سمیع اللہ، عبدالحفیظ، عبداللہ، نورالسلام، سراج احمد، گلریز، سید کلام، نعیم اللہ سمیت 21 طلبا کی تصاویر خطرناک دہشت گردوں میں 12 جون کو پولیس کی آفیشل ویب سائٹ پر اپ لوڈ کی گئیں۔میڈیا  نے متعلقہ افسروں سے موقف لینے کیلئے رابطہ کیا تو تصاویر ویب سائٹ سے فوری طور پر ہٹا دی گئیں۔

مزید : جرم و انصاف