صوابی، کار سرکار میں بداخلت کرنے پر پی ٹی آئی رہنما ڈاکٹر فضل الٰہی گرفتار

صوابی، کار سرکار میں بداخلت کرنے پر پی ٹی آئی رہنما ڈاکٹر فضل الٰہی گرفتار

صوابی( بیورو رپورٹ)پولیس نے پچیس جولائی کو ہونے والے عام انتخابات کے دوران کار سرکاری میں مداخلت کرنے پر پاکستان تحریک انصاف ضلع صوابی کے رہنما اور پی کے 46صوابی4سے آزاد امیدوار ڈاکٹر فضل الٰہی کو گرفتار کر لیا۔ پولیس تھانہ تورڈھیر کی رپورٹ کے مطابق پچیس جولائی کی شام الیکشن کے اختتام پر جمشید سکنہ زیدہ اپنے موٹر کار میں اپنی بیوی جو کہ جلبئی پولنگ اسٹیشن میں پریزائڈنگ آفیسر تھی ڈیوٹی سے فارغ ہونے کے بعد لے جانے کے لئے آئے تھے اس دوران ڈاکٹر فضل الٰہی نے جمشید پر الزام لگایا کہ انہوں نے جعلی ووٹ پول کئے اور بغیر کسی ثبوت اور شواہد جمشید کو بُری طرح زدو کوپ کیا اس دوران ان سے موبائل سیٹ اور پیسے بھی گم گئے تھے جمشید کی رپورٹ پر تھانہ تورڈھیر نے آزاد امیدوار ڈاکٹر فضل الٰہی کے خلاف ایف آئی آر درج کر کے تفتیش شروع کر دی اور جمعرات کے روز تورڈھیر پولیس نے ڈاکٹر فضل الٰہی کو گرفتار کر کے تھانہ لاہور کی حوالات میں بند کر دیا اور ان کے خلاف سات مختلف دفعات کے تحت ایف آئی آر درج کر لی گئی ہے #

مزید : پشاورصفحہ آخر