نشتر ہسپتال انتظامیہ نئے بھرتی ہونیوالے ملازمین کیخلاف کوئی بھی سخت اقدام کرنے سے باز رہے: ہائیکورٹ کا حکم

نشتر ہسپتال انتظامیہ نئے بھرتی ہونیوالے ملازمین کیخلاف کوئی بھی سخت اقدام ...

ملتان ( خبر نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ ملتان بینچ نے نشتر ہسپتال میں نئے بھرتی ہونے والے ملازمین کوحاضری لگانیکی اجازت نہ (بقیہ نمبر38صفحہ12پر )

دینے کے خلاف درخواست میں سیکرٹری صحت پنجاب،نشترمیڈیکل یونیورسٹی وہسپتال کے وائس چانسلراورایم ایس سے15 اگست کورپورٹ اورشق وارجواب طلب کرلیاہے۔فاضل عدالت نے نشتر ہسپتال حکام کومذکورہ ملازمین کے خلاف کوئی سخت اقدام کرنے سے بھی بازرہنے کاحکم دیاہے۔فاضل عدالت میں ملتان کے احمدندیم،مشتاق،فہدعظیم،علی ،محمدحنیف،رابعہ انوار،تنزیلہ ہما،علی مشتاق،محمدعمران اورفرحان نوازسمیت دیگر افرادنے درخواست دائرکی تھی کہ نشتر ہسپتال انتظامیہ کی جانب سے مختلف آسامیاں مشتہرکی گئیں جس پر درخواست گذارافرادنے بھی رجوع کیاتو قواعدوضوابط مکمل کرنے کے بعددرخواست گذاروں کوماہ مئی میں بھرتی کرلیاگیاجس پر تقررنامے جاری ہونے کے بعدماہ جولائی کے آغازپر جوائننگ بھی دے دی ہے لیکن اب انتظامیہ کی جانب سے انہیں حاضری نہیں لگانے دی جارہی ہے اورنہ ہی تنخواہ اداکی جارہی ہے۔

سخت اقدام سے گریز

مزید : ملتان صفحہ آخر