سی ڈی اے و ایم سی آئی میں ٹکراؤ سے ادارہ تباہ ہوگا،چوہدری یٰسین

سی ڈی اے و ایم سی آئی میں ٹکراؤ سے ادارہ تباہ ہوگا،چوہدری یٰسین

اسلام آباد( سٹاف رپورٹر)سی ڈی اے مزدور یونین کی مجلس شوریٰ کا اجلاس مرکزی یونین آفس جی سیون ستارہ مارکیٹ میں منعقد ہوا ،اجلاس میں مزدور یونین کے مرکزی عہدیداران ،مجلس شوریٰ کے اراکین اور نمائندوں نے شرکت کی ،اجلاس میں میٹروپولیٹن کارپوریشن کی طرف سے انوائرمنٹ ملازمین کے خلاف اٹھائے جانے والے اقدامات ،سینی ٹیشن کی نجکاری ،سی ڈی اے ملازمین و اثاثوں کی تقسیم، پلاٹوں کی الاٹمنٹ ،ملازمین کے بچوں کی بھرتی ،سی ڈی اے میں ہونے والی من پسند پوسٹنگ ٹرانسفر اورموجودہ سی بی اے کی ناقص کارکردگی کو مکمل طور پر زیر بحث لایا گیا ،سی ڈی اے مزدور یونین کے قائد چوہدری محمد یٰسین نے مجلس شوری کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سی ڈی اے اور میٹروپولیٹن کارپوریشن کے درمیان اختیارات کے سلسلے میں پیدا ہونے والا ٹکراؤ ادارے کی تباہی کا باعث بنے گا اور انوائرمنٹ ملازمین کے حوالے سے میٹروپولیٹن کارپوریشن نے جو حکم نامہ جاری کیا سی ڈی اے مزدور یونین اس کو مکمل طور پر مستردکرتی ہے اور اسکو وقتی طورپر روکنا مسئلے کا حل نہیں یہ صرف موجودہ سی بی اے جو انتظامیہ کی منظور نظر ہے انکے ساتھ ملکر ملازمین کو بیوقوف بنانے کی کوشش ہے جس طریقے سے عدالتی حکم کو بالائے طاق رکھتے ہوئے سینی ٹیشن ڈائریکٹوریٹ کی نجکاری کا فیصلہ کیا گیا یہ بھی ادارے کے ساتھ سنگین مذاق ہے اور سی ڈی اے کے اثاثوں کو تقسیم کرنے کا عمل اور ملازمین کی من پسند پوسٹنگ ٹرانسفر انتقامی کاروائی کا حصہ اور سی بی اے یونین کے عہدیداروں کی جیب گرم کا گھناؤنا عمل ہے جس کو سی ڈی اے مزدور یونین اور اسکے عہدیداران اور کارکن کسی طور پر بھی قبول کرنے کو تیار نہیں ،سی ڈی اے مزدور یونین نے بطور سی بی اے ادارے و ملازمین اوراثاثوں کی تقسیم ،سینی ٹیشن کی نجکاری اور پلاٹوں کی الاٹمنٹ کے لیے طویل قانونی جدوجہد کی اور جب سات سالہ طویل جدوجہد کے بعد پلاٹوں کا فیصلہ ملازمین کے حق میں آیا تو موجودہ سی بی اے خاموش تماشائی بنی رہی جس کے نتیجے میں سی ڈی اے انتظامیہ انٹراکورٹ اپیل میں چلی گئی اور ایک بار پھر سی ڈی اے ملازمین کو انکے پلاٹوں کے حق سے محروم کر دیا گیا ،موجودہ سی بی اے جس نے گزشتہ ریفرنڈم میں سی ڈی اے محنت کشوں کو ڈبل بیسک دلوانے اور مراعات کو بڑھانے کے خواب دکھائے تھے آج وہ سی ڈی اے ملازمین کے بنیادی حقوق کا تحفظ کرنے میں بھی ناکام ہو چکی ہے ،نام نہاد پریس کانفرنس اور ناکام احتجاج کر کے سی ڈی اے ملازمین کو بیوقوف بنایا جا رہا ہے لیکن سی ڈی اے مزدور یونین اپوزیشن میں ہونے کے باوجود سی ڈی اے محنت کشوں کو یہ یقین دلاتی ہے کہ وہ مزدور دشمن ٹولے کو سی بی اے کے نام پر محنت کشوں کے حقوق کا سودا نہیں کرنے دے گی اورادارے کی بقاء اور ملازمین کے حقوق کی خاطر اپنی اخلاقی اور قانونی جدوجہد کو جاری رکھے گی ،ہماری سی ڈی اے اور میٹروپولیٹن کارپوریشن انتظامیہ سے اپیل ہے کہ وہ سی ڈی اے سے متعلقہ تمام سٹیک ہولڈرز کے ساتھ ملکر اس مسئلے بہتر حل تلاش کریں تاکہ ادارے کا صنعتی امن قائم رہ سکے اور مزدوروں میں پائی جانے والی بے چینی کا خاتمہ ہو ،سی ڈی اے مزدور یونین جلد اپنی جنرل باڈی کا اجلاس بلا کر اپنے آئندہ کے لائحہ عمل کا اعلان کرے گی اور اگر مزدوروں کے حقوق کی خاطر ہمیں سڑکوں پر آنا پڑ ا تو ماضی کی طرح ہم اپنے اس حق کو بھی استعمال کرنے کا جمہوری حق محفوظ رکھتے ہیں ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر