تحریک انصاف اور ایم کیوایم کی لڑائی میں ایک مرتبہ پھر شدت آ گئی ، حکومت بننے سے پہلے ہی عمران خان کیلئے نئی مشکل کھڑی ہو گئی

تحریک انصاف اور ایم کیوایم کی لڑائی میں ایک مرتبہ پھر شدت آ گئی ، حکومت بننے ...
تحریک انصاف اور ایم کیوایم کی لڑائی میں ایک مرتبہ پھر شدت آ گئی ، حکومت بننے سے پہلے ہی عمران خان کیلئے نئی مشکل کھڑی ہو گئی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن )پاکستان تحریک انصاف نے مرکز میں حکومت بنانے کیلئے متحدہ قومی موومنٹ پاکستان سے اتحاد کر لیاہے تاہم اب یہ اتحاد مشکلات کا شکار نظر آ رہاہے کیونکہ دونوں پارٹیوں کے رہنما ایک دوسرے کے خلاف بیان بازی کرتے ہوئے نظر آ رہے ہیں تاہم اب ایم کیوایم کی جانب سے پی ٹی آئی کے سندھ اسمبلی کیلئے ممکنہ اپوزیشن لیڈر کے نام پر تحفظات کا اظہار کیا گیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف اور ایم کیوایم کو بیان بازی سے روکنے میں ناکام نظر آ رہی ہیں تاہم جس وقت اپوزیشن لیڈر کا معاملہ سامنے آیا تو خواجہ اظہار حسن جو کہ خود بھی اپوزیشن لیڈر رہ چکے ہیں ، نے فردوس شمیم کو اپوزیشن لیڈرکی متوقع نامزدگی پر ناپسندیدگی کا اظہار کر دیاہے ۔

خواجہ اظہار الحسن نے ٹویٹر پیغام جاری کرتے ہوئے لکھا کہ ” پی ٹی آئی کے ساتھ ہمارا اتحاد مشروط ہے اور یہ شرائط افراد اور پارٹی سے بھی بالا تر ہوکر کراچی اور اربن سندھ کی ترقی اور بلدیاتی نمائندوں کے اختیارات کی منتقلی کی مشترکہ کوشش شامل ہے۔ فردوس نقوی کا نام اپوزیشن لیڈر کے لئے سامنے آیا تو تحفظات ہونگے۔

مزید : قومی