یہ تصویر مومو کی ہے، مومو کیا چیز ہے؟ جانئے اور اپنے بچوں کو بچائیں

یہ تصویر مومو کی ہے، مومو کیا چیز ہے؟ جانئے اور اپنے بچوں کو بچائیں
یہ تصویر مومو کی ہے، مومو کیا چیز ہے؟ جانئے اور اپنے بچوں کو بچائیں

  

بیونس آئرس(نیوز ڈیسک) قاتل گیم بلیو وہیل کی دہشت سے ابھی دنیا کی جان نہیں چھوٹی تھی کہ ایک اور ایسی ہی خوفناک گیم سامنے آ گئی ہے جو متعدد ممالک میں نوعمر افراد کو اپنی لپیٹ میں لے رہی ہے۔ اس کا نام ”مومو چیلنج“ بتایا گیا ہے، جس کا مرکزی کردار ایک پراسرار اور خوفناک شکل والی گڑیا ”مومو“ ہے۔

بیونس آئرس ٹائمز کے مطابق یہ بلیو وہیل جیسی ہی ایک گیم ہے جس میں نوعمر افراد کو چیلنج دیا جاتا ہے کہ وہ واٹس ایپ پر ایک اکاﺅنٹ ایڈ کریں جو انہیں خوفناک تصاویر اور بتدریج مشکل ہوتے ہوئے چیلنج دیتا ہے۔ بلیو وہیل کی طرح یہ چیلنج بتدریج زیادہ مشکل اور خطرناک ہوتے چلے جاتے ہیں اور ان میں سے آخری چیلنج خود کشی کا ہوتا ہے۔

گڑیا”مومو“ جاپانی آرٹسٹ میڈوری ہائشی کی تخلیق ہے جو عجیب و غریب اور خوفناک نقوش کے باعث بچوں کے لئے ایک خوفناک چیز سمجھی جاتی ہے۔ نئی گیم کا نام اسی گڑیا کے نام پر رکھا گیا ہے اور اس کا آغاز بھی اسی گڑیا کی تصویر سے ہوتا ہے۔ آرٹسٹ میڈوری کا کہنا ہے کہ وہ مومو گڑیا کے خالق ضرور ہیں لیکن بچوں کو خوفزدہ کرنے اور خود کشی کی جانب مائل کرنے والی گیم سے ان کا کوئی تعلق نہیں اور وہ اس کی شدید مذمت کرتے ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق امریکہ، ارجنٹینا، فرانس، میکسیکو اور جرمنی سمیت متعدد ممالک میں یہ اطلاعات سامنے آرہی ہیں کہ بچے اس گیم سے متاثر ہورہے ہیں جبکہ ارجنٹینا میں ایک 12 سالہ لڑکی کی خود کشی کو بھی اسی گیم کا نتیجہ قرار دیا جارہا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس