’کیا تم نے جہاز میں شراب پی تھی؟‘ برطانوی خاتون سے دبئی ائیرپورٹ پر سوال، جواب ہاں میں دیا تو گرفتارکرلیاگیا، لیکن کیوں؟ جان کر آپ بھی دنگ رہ جائیں گے

’کیا تم نے جہاز میں شراب پی تھی؟‘ برطانوی خاتون سے دبئی ائیرپورٹ پر سوال، ...
’کیا تم نے جہاز میں شراب پی تھی؟‘ برطانوی خاتون سے دبئی ائیرپورٹ پر سوال، جواب ہاں میں دیا تو گرفتارکرلیاگیا، لیکن کیوں؟ جان کر آپ بھی دنگ رہ جائیں گے

  

دبئی سٹی(مانیٹرنگ ڈیسک)اہل مغرب کے ہاں شراب نوشی قطعاً کوئی معیوب بات نہیں لہٰذا فضائی سفر کے دوران بھی شراب کا بلا تکلف استعمال کیا جاتا ہے مگر لندن سے دبئی کا سفر کرنے والی ایک برطانوی خاتون کے لئے دوران پرواز شراب پینا بہت بڑی مصیبت کا سبب بن گیا ہے۔

ایلی ہولمن نامی 44 سالہ خاتون دانتوں کی ڈاکٹر ہیں اور وہ 13 جولائی کے روز اماراتی ائیرلائن کی پرواز سے دبئی آئی تھیں۔ ایلی کا کہنا ہے کہ دبئی انٹرنیشنل ائیرپورٹ پر ایک امیگریشن افسر نے انہیں بتایا کہ ان کا ویزا ایکسپائر ہو چکا ہے اور انہیں نئے ویزے کے لئے درخواست دنیا ہو گی۔ ایلی کا مﺅقف تھا کہ ان کہ وہ کارآمد ویزے پر دبئی آئی ہیں اور اسی بات پر ان کے درمیان تکرار ہو گئی۔ وہ کہتی ہیں کہ دراصل امیگریشن افسر ان کے ساتھ تکرار کی وجہ سے غصے میں تھا اور اسی وجہ سے انہیں شراب نوشی کے الزام میں پھنسا دیا۔وہ کہتی ہیں کہ پرواز کے دوران کھانے کے ساتھ انہیں شراب کا گلاس دیا گیا تھا۔ اماراتی ائیرلائن کی برطانیہ سے دبئی آنے والی پروازوں میں مسافروں کو شراب پیش کی جاتی ہے اور اسے سٹینڈرڈ پریکٹس کا حصہ سمجھا جاتا ہے۔

ایلی کی مزید بدقسمتی یہ ہوئی کہ انہوں نے امیگریشن افسر کی بدتمیزی کے ثبوت کے طور پر اس کی ویڈیو بنانے کی کوشش کی۔ جیسے ہی انہوں نے ویڈیو بنانے کا آغاز کیا تومتعدد پولیس اہلکاروں نے انہیں گھیر لیا اور ائرپورٹ کے حراستی مرکز میں لے گئے۔ ان کا کہنا ہے کہ انہیں ائیرپورٹ کے حراستی مرکز میں بند کردیا گیا جبکہ ان کی چار سالہ بیٹی بھی ان کے ساتھ تھی، جہاں ان کے بیان کے مطابق وہ تین دن تک قید رہیں۔

اگرچہ وہ اس پر بہت پریشان ہیں لیکن یہ تو ابھی آغاز ہے۔ ابھی ان پر مقدمہ چلے گا اور عین ممکن ہے کہ مزید ایک سال انہیں سخت مشکلات میں ہی گزارنا پڑے۔ ان کے مقدمے کا فیصلہ ہونے تک پاسپورٹ انہیں نہیں مل سکے گا جس کا مطلب ہے کہ وہ سفر نہیں کرسکیں گے۔ ایلی کا کہنا ہے کہ قانونی فیسوں کی مد میں اور اپنے کام سے غیر حاضری کی وجہ سے اب تک انہیں 30ہزار پاﺅنڈ کا نقصان ہوچکا ہے۔ ان کا کلینک بند ہے، ان کے بچے و اہلخانہ شدید پریشان ہیں، اور انہیں کسی سے ملاقات کی اجازت بھی نہیں مل سکی۔

مزید : عرب دنیا