کابینہ بنانے میں بہت دقت پیش آئی،پرامن اور شفاف الیکشن کرانا ہدف تھا:نگراں وزیراعلیٰ خیبر پختونخواہ

کابینہ بنانے میں بہت دقت پیش آئی،پرامن اور شفاف الیکشن کرانا ہدف تھا:نگراں ...
کابینہ بنانے میں بہت دقت پیش آئی،پرامن اور شفاف الیکشن کرانا ہدف تھا:نگراں وزیراعلیٰ خیبر پختونخواہ

  

پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن)نگراں وزیراعلیٰ خیبر پختونخواہ دوست محمد خان نے کہاکہ الیکشن کاپرامن اورکامیاب انعقادچیلنج تھا،ٹیم ورک کےساتھ کام کیا،عوام،فورسزاورسرکاری افسران کے تعاون پرمشکورہوں۔

نجی ٹی وی چینل” جیو نیوز“ کے مطابق نگراں وزیراعلیٰ خیبر پختونخواہ دوست محمد خان نے صوبائی کابینہ کے آخری اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کابینہ بنانے میں بہت دقت پیش آئی،بہت سے وزیروں کو بعد میں پتاچلا کہ وہ وزیر بن رہے ہیں،پرامن اور شفاف الیکشن کرانا ٹاسک تھا،اپنی آئینی ذمے داری کی احسن ادائیگی میں سرخروہوئے،جانبداری کاٹھپانہ لگے اس لیے میری پوری ٹیم انتخابات کے دوران چپ رہی،اپنی غیرجانبداری سے لوگوں کےاندازے غلط ثابت کیے،صاف،شفاف اورغیرجانبدار الیکشن کا انعقاد ممکن بنایا،عوام، پولیس اورمعاشرے کے تمام طبقوں نے بے بہاقربانیاں دیں۔

دوست محمد خان نے کہا کہ انتخابات کے دوران روزانہ درجنوں دھمکیاں ملتی تھیں،ہارون بلور کیلئے تھرٹ الرٹ نہیں تھا لیکن پر بھی حملہ ہوگیا،ملک بین الاقوامی سازشوں میں گھرا ہوا ہے، ماضی میں پاکستانی عوام کے پیسے اور خزانے کا خیال نہیں رکھا گیا، خداکرے نئے لڑکے بھی کوئی کام کرسکیں، حکومت میں آتے ہی سب سے پہلے سروس اسٹیشنزکاڈیٹا حاصل کیا، ان سروس اسٹیشنزسے روزانہ کئی ٹن پانی ضائع ہوتا ہے۔اس پر ہم نے کافی حد تک کنٹرول کر لیا ہے ۔

مزید : قومی /علاقائی /خیبرپختون خواہ /پشاور