مقبوضہ کشمیر سے متعلق مودی کا خیال بالکل غلط،وادی کے مسلمانوں کا رد عمل پہلے سے زیادہ ہوگا:اعتزاز احسن

مقبوضہ کشمیر سے متعلق مودی کا خیال بالکل غلط،وادی کے مسلمانوں کا رد عمل پہلے ...
مقبوضہ کشمیر سے متعلق مودی کا خیال بالکل غلط،وادی کے مسلمانوں کا رد عمل پہلے سے زیادہ ہوگا:اعتزاز احسن

  


لاہور(ڈیلی  پاکستان آن  لائن)پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما اعتزاز احسن نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر کے معاملات آسانی سے حل نہیں ہوں گے، مودی کا خیال ہے معاملات مقبوضہ کشمیر میں ٹھیک ہو جائیں گے لیکن ایسا نہیں ہے،وادی کے مسلمانوں کا رد عمل پہلے سے زیادہ ہوگا۔

نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے بیرسٹر اعتزاز احسن نے نریندر مودی کی ذہنیت کو آر ایس ایس والی قرار دیتے ہوئے کہا کہ مودی کے بھارت میں مسلمان کو گائے لے جاتے ہوئے سڑک پر قتل کر دیا جاتا ہے۔انھوں نے کہا کہ بھارت مقبوضہ وادی کے مسلمانوں پر کرفیو، جبر اور ظلم کرتا رہے گا لیکن دوسری طرف مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں کا رد عمل اب پہلے سے زیادہ ہوگا، بھارتی حکومت انڈینز کو مقبوضہ کشمیر میں لا کر نہیں بسا سکتی۔اعتزاز احسن کا یہ بھی کہنا تھا کہ بھارت کے اقدامات کی اطلاع فارن آفس کو ہونی چاہیے تھی، بھارت نے امریکی حکام کو 10 سے 15 دن قبل ضرور بتایا ہوگا، ثالثی کی پیش کش سے قبل ہی معاملات کا امریکی صدر کو علم ہوگا۔انھوں نے کہا کہ کرتارپور راہداری سے متعلق نومبر میں تقریبات ہیں، حکومت راہداری اور اس سے منسلک منصوبے جلد مکمل کرے، اگر بھارت نے اچانک راہداری کھولنے سے انکار کیا تو ملبہ اس پر ہی جائے گا۔انھوں نے کہا کہ قابض بھارتی فوج کشمیریوں کی نسل کشی کر رہی ہے، نسل کشی کے معاملے کو اجاگر کرنا ہوگا، یہی حالات رہے تو جنگ کی صورت حال بھی ہو سکتی ہے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور