حضرت عثمان غنی ؓ کا یوم شہادت عقیدت و احترام کے ساتھ منایا گیا

حضرت عثمان غنی ؓ کا یوم شہادت عقیدت و احترام کے ساتھ منایا گیا

  

لاہور(پ ر)ملک بھر میں خلیفہ سوم سیدنا حضرت عثمان غنیؓکا یوم شہادت گذشتہ روز 18 ذی الحجہ کو انتہائی عقیدت و احترام سے منایاگیا اس سلسلہ میں ملک کے تمام شہروں میں مختلف دینی و مذہبی جماعتیں اور تنظیمیں جلسے، سیمینار اور دیگر تقریبات منعقد ہوئیں جس میں مقررین سیدنا حضرت عثمان غنی ؓ کے فضائل و مناقب، سیرت و کردار، بے مثال فتوحات اور سخاوت و شجاعت پر روشنی ڈالتے ہوئے ان کو زبردست خراج عقیدت پیش کیا حضرت عثمان غنی ؓ کے یوم شہادت کے سلسلہ میں ”تذکرہ اسلاف کونسل پاکستان“ کے زیر اہتمام حضرت عثمان غنیؓ سیمینار سے مختلف دینی و مذہبی جماعتوں کے راہنماؤں مولانا عبدالرؤف فاروقی، مولانا اسداللہ فاروق نقشبندی، علامہ یونس حسن، مولانا الطاف حسین گوندل، علامہ اسید الرحمن سعید، مولانا سید فہیم الحسن تھانوی اور دیگر علماء کرام نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حضرت عثمان غنیؓ وہ خوش قسمت شخصیت ہیں کہ جن کو حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے کئی بار جنت کی بشارت دی اور آپ رضی اللہ عنہ کو ”عشرہ مبشرہ“ صحابہ کرامؓمیں بھی شامل ہونے کی سعادت حاصل ہے۔

،حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی دو بیٹیوں حضرت سیدہ رقیہؓ اور حضرت سیدہ ام کلثوم ؓ کے ساتھ یکے بعد دیگرے نکاح کی وجہ سے حضرت عثمان عنیؓ کو ”ذوالنورین“ بھی کہا جاتا ہے انہوں نے کہا کہ آپ ؓ ”السابقون الاوّلون“ کی فہرست میں بھی شامل ہیں، آپ ؓ حافظ قرآن، جامع القرآن اور ناشر القرآن بھی ہیں،آپؓ کے بارے میں ہی حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ جنت میں ہر نبی کا ایک ساتھی و رفیق ہوتا ہے میرا ساتھی جنت میں عثمان غنیؓ ہوگا، آپ ؓ کے دور خلافت میں سیدناحضرت امیر معاویہؓ نے اسلام کا پہلا بحری بیڑا تیار کر کے ”بحر اوقیانوس“ میں اسلام کا عظیم لشکر اتار دیااور اس طرح فتح حاصل کرتے ہوئے آپ ؓ کی فوجوں نے فرانس ویورپ کے کئی ممالک میں اسلام کے آفاقی نظام کو پہنچا دیا مقررین نے مطالبہ کیا کہ حکومت نسل نو کو خلفاء راشدین اور دیگر مقدس شخصیات کی روشن زندگیوں اور کردار و کارناموں سے متعارف کرانے کے لیے سرکاری سطح پر عام تعطیل کا اعلان کرے اور ریڈیو، ٹی وی پر ان شخصیات کے حوالہ سے خصوصی پروگرام منعقد کیا جائے انہوں نے کہا کہ صحابہ کرامؓ و اہل بیتؓ اور ازواج مطہرات ؓ کی ناموس کے تحفظ و دفاع کے لیے آئین و قانون کے دائرہ میں رہتے ہوئے کرتے رہیں گے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -