جاپانی شہر ناگاساکی پر ایٹمی حملے کی 75 برسی،یادگاری تقریب ہوئی

جاپانی شہر ناگاساکی پر ایٹمی حملے کی 75 برسی،یادگاری تقریب ہوئی

  

ٹوکیو(شِنہوا)جاپان کے شہر ناگاساکی نے اتوار کو دوسری عالمی جنگ کے دوران ایٹم بم گرائے جانے کی 75ویں برسی منائی جبکہ سالانہ یادگاری تقریب میں تقریبا 70 ملکوں اور خطوں کے لگ بھگ 500افراد اور نمائندوں نے شرکت کی۔ یہ تقریب امن پارک میں منعقد ہوئی اور اس سال شرکاء کی تعداد معمول سے تقریبا دسویں حصے کے برابر تھی کیونکہ ملک بھر میں نوول کرونا وائرس کا پھیلا ؤ جاری ہے اس لئے  ہجوم اکھٹا کرنے سے اجتناب کیا گیا۔ شہر کے مئیر ٹومی ہیسا تا نے تقریب میں مرکزی حکومت پر زور دیا کہ وہ فوری طور پر جوہری ہتھیاروں پر پابندی کے اقوام متحدہ کے معاہدے پر دستخط کردے۔ انہوں نے ایٹمی ہتھیاروں کے خاتمے کی جانب مزیدکوششوں پر بھی زور دیا۔امریکا نے 9اگست 1945 کو ناگاساکی پر ایٹمی حملہ کیا تھا جس میں 74 ہزار جانیں گئی تھیں۔ناگاساکی حملے سے تین دن قبل امریکا نے جاپان کے ایک او ر شہر ہیروشیما پر بھی ایٹمی حملہ کیا تھاجس کے فوری بعد جاپان نے ہتھیار ڈال دیئے تھے۔

ناگاساکی برسی

ایٹمی حملہ 

مزید :

صفحہ اول -