پی ٹی ڈی سی ملازمین کی برطرفی اور بورڈ کی تشکیل سے متعلق کیس ،فریقین سے دلائل طلب

پی ٹی ڈی سی ملازمین کی برطرفی اور بورڈ کی تشکیل سے متعلق کیس ،فریقین سے دلائل ...
پی ٹی ڈی سی ملازمین کی برطرفی اور بورڈ کی تشکیل سے متعلق کیس ،فریقین سے دلائل طلب

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آباد ہائی کورٹ نے پی ٹی ڈی سی ملازمین کی برطرفی اور بورڈ کی تشکیل سے متعلق کیس میں فریقین سے دلائل طلب کرتے ہوئے کیس کی مزید سماعت19 اگست تک ملتوی کردی ۔

نجی ٹی وی کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ میں پی ٹی ڈی سی ملازمین کی برطرفی اور بورڈ کی تشکیل سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی،نیشنل ٹورزم کوآرڈی نیشن بورڈ اور برطرف ملازمین کے وکیل عدالت میں پیش ہوئے،وکیل درخواست گزار نے کہاکہ کابینہ ڈویژن نے پہلے جواب میں ترمیم کرکے نیا جواب جمع کرایا ہے،جسٹس عامر فاروق نے کہاکہ ایسے نہیں ہوتا کہ آپ کہیں کہ پہلے غلطی ہو گئی اب صحیح کر رہے ہیں، پہلے بھی ایک کیس میں یہی غلطی کی ، یہ کیسے ممکن ہے پھر غلطی ہوجائے۔

جسٹس عامرفاروق نے استفسارکیاکہ اب بتائیں بورڈ کس نے تشکیل دیا ؟،ڈپٹی اٹارنی جنرل خالد محمود نے کہا کہ وزیراعظم نے پی ٹی ڈی سی بورڈ تشکیل دیا ہے، جسٹس عامر فاروق نے استفسار کیاکہ قانون بتا دیں جس کے تحت بورڈ تشکیل دیا جا سکتا ہے،سیاحت صوبائی معاملہ ہے یا وفاق کا ؟ ،کیا جو معاملہ وفاق کا نہیں اس پر وزارت بنائی جا سکتی ہے؟۔

ڈپٹی اٹارنی جنرل راجہ خالد محمود نے جواب دیتے ہوئے کہاکہ ایسی صورت میں کوئی وزارت نہیں بنائی جا سکتی، عدالت نے استفسار کیاکہ جب یہ صوبائی معاملہ ہے وفاق اس میں کیوں آرہا ہے؟ ۔عدالتوں سمیت ہر کسی نے قانون آئین کے تحت کام کرنا ہوتا ہے،عدالت نے کہاکہ وزیراعظم کو اس بورڈ کی تشکیل کے لیے کس نے رائے دی؟،جسٹس عامر فاروق نے کہاکہ ملک میں آئین ہے اس سے اوپر کچھ نہیں۔عدالت نے فریقین سے دلائل طلب کرتے ہوئے کیس کی مزید سماعت 19 اگست تک ملتوی کردی گئی۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -