وزیراعظم ہاﺅس نے 24 ارب کے قرضہ کی انکوائری رپورٹ قرضہ انکوائری کمیشن کو واپس بھجوادی

وزیراعظم ہاﺅس نے 24 ارب کے قرضہ کی انکوائری رپورٹ قرضہ انکوائری کمیشن کو واپس ...
وزیراعظم ہاﺅس نے 24 ارب کے قرضہ کی انکوائری رپورٹ قرضہ انکوائری کمیشن کو واپس بھجوادی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم آفس نے ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ 24 ارب روپے کے قرضہ کی تحقیقات کے معاملے پر انکوائری رپورٹ قرضہ انکوائری کمیشن کو واپس بھجوادی،انکوائری رپورٹ سے متعلق مزید سوالات اور ہدایات جاری کی گئی ہیں،وزیراعظم نے مشیر برائے احتساب شہزاداکبر کو خصوصی ٹاسک بھی سونپ دیا۔

نجی ٹی وی جی این این نے ذرائع کے حوالے سے کہاہے کہ وزیراعظم رپورٹ کی بنیاد پر نیب تحقیقات اور ذمہ داروںں کیخلاف کارروائی چاہتے ہیں ،2008سے2018تک ترقیاتی منصوبوں میں ایک ہزار ارب روپے سے زائد نقصان ہوا۔

اورنج لائن ٹرین،بی آر ٹی پشاور بس سمیت ایک ہزار سے زائد منصوبوں کی انکوائری کی گئی ،اکنامک افیئرڈویژن،وزارت خزانہ سمیت مختلف اعلیٰ حکام پر ذمہ داری عائد کی گئی ،کئی منصوبوں میں اختیارات کے ناجائز استعمال اورکک بیکس کی نشاندہی بھی کی گئی ،انکوائری کمیشن نے قومی خزانے کو نقصان پہنچانے والوں کیخلاف کارروائی کی سفارش کی۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -