سری لنکن پریمیر لیگ میں پاکستانی کھلاڑی بھی چار چاند لگانے کو تیار لیکن انہیں منتخب کرنے کے امکانات بہت کم مگر کیوں؟ آپ بھی جانئے

سری لنکن پریمیر لیگ میں پاکستانی کھلاڑی بھی چار چاند لگانے کو تیار لیکن ...
سری لنکن پریمیر لیگ میں پاکستانی کھلاڑی بھی چار چاند لگانے کو تیار لیکن انہیں منتخب کرنے کے امکانات بہت کم مگر کیوں؟ آپ بھی جانئے

  

کولمبو (ڈیلی پاکستان آن لائن) سری لنکا پریمیر لیگ کو پاکستانی پلیئرز بھی چارچاند لگانے کو تیار ہیں اور محمد حفیظ سمیت متعدد کھلاڑیوں نے سری لنکن ایونٹ میں دلچسپی ظاہر کر دی تاہم لیگ کیلئے فری لانس کرکٹرز کو ترجیح دی جائے گی، سٹار کھلاڑیوں کو 2 ستمبر کے بعد عدم دستیابی کی وجہ سے زیرغور نہ لائے جانے کا امکان ہے،مجموعی طور پر 93 انٹرنیشنل کرکٹرز نے دستیابی ظاہر کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق رواں ماہ کے آخر میں شیڈول لنکا پریمیر لیگ میں دنیا بھر کے کرکٹرز نے دلچسپی ظاہر کی ہے،ان میں آل راﺅنڈر محمد حفیظ سمیت پاکستانی کھلاڑی بھی شامل ہیں البتہ قومی ٹیم کے ساتھ انگلینڈ میں مصروف ہونے کی وجہ سے سٹارز2 ستمبر کے بعد ہی دستیاب ہوں گے جس کے باعث انہیں زیر غور لائے جانے کا امکان کم ہے،ایونٹ میں پاکستان کے فری لانس کرکٹرز حصہ لے سکتے ہیں۔

ایونٹ 28 اگست سے 20 ستمبر تک 5 ٹیموں کے درمیان کھیلا جائے گا،مجموعی طور پر 93 انٹرنیشنل کھلاڑیوں نے دستیابی ظاہر کی تاہم ان میں سے صرف 30 کو ہی منتخب کیا جائے گا،ٹاپ کیٹیگری پلیئرز کو 40 سے 50 ہزار ڈالر تک معاوضہ ملے گا، سری لنکا کرکٹ بورڈ ذرائع کے مطابق موجودہ تمام بنگلہ دیشی کھلاڑی ایس پی ایل میں دلچسپی ظاہر کر چکے، اسی طرح افغانستان کے اصغر افغان، نیوزی لینڈ کے مارٹن گپٹل، ٹم ساﺅتھی، ایڈم ملنے، زمبابوین سکندر رضا اور گریم کریمر، جنوبی افریقی ورنون فلینڈراور ٹیمبا باووما بھی دستیابی ظاہر کرنے والوں میں شامل ہیں، حسب توقع بھارت سے کسی بھی کرکٹر نے دلچسپی ظاہر نہیں کی۔

دریں اثناءٹیموں کی کوچنگ کیلئے ڈیو واٹمور، جان بکانن، گراہم فورڈ، لانس کلوزنر، جے پی ڈومینی اور جان لیوس کے ناموں پر غور کیا جا رہا ہے، واٹمور، فورڈ اور لیوس کو سری لنکن کرکٹرز کے ساتھ کوچنگ کا تجربہ بھی ہے، اس لئے ان کی خدمات حاصل کئے جانے کا زیادہ امکان ہوگا۔

مزید :

کھیل -