ناقص گیس سلنڈر سے ایک اور حادثہ

ناقص گیس سلنڈر سے ایک اور حادثہ

  

جی ٹی روڈ پر راہوالی (گوجرانوالہ کینٹ) کے قریب المناک حادثہ پیش آیا، اس کے نتیجے میں گیارہ افراد جل کر جاں بحق ہوئے اور سات شدید زخمی ہوگئے، یہ حادثہ اسلام آباد سے لاہور آنے والی ویگن کا گیس سلنڈر پھٹ کر آگ لگنے سے ہوا،  وفات پانے والوں میں مردوں اور خواتین کے علاوہ بچے بھی شامل ہیں، جاں بحق ہونے والوں کی شناخت مشکل ترین مسئلہ بن گیا۔ ریسکیو ذرائع سے جو خبریں شائع اور نشر ہوئیں ان کے مطابق ویگن راہوالی کے قریب پہنچی تو کسی اندرونی شارٹ سرکٹ کے باعث گیس سلنڈر کو آگ لگی تھی۔ ڈرائیور نے ویگن کو اچانک روکا تو پیچھے سے آنے والے دودھ کے ٹینکر نے ٹکر مار دی، اس کے نتیجے میں سلنڈر پھٹ گیا اور تیز آگ نے پوری ویگن کو لپیٹ میں لے لیا،متعدد مسافر چیخ و پکار کرتے ہوئے اللہ کو پیارے ہوگئے۔اس حادثے نے ایک بار پھر انتظامی نااہلی ثابت کر دی کہ ویگنوں میں ممانعت کے باوجود گیس سلنڈر استعمال کئے جا رہے ہیں اور پورے تحفظات اختیار نہیں کئے جاتے، حال ہی میں یہ خبریں بھی سامنے آئیں کہ غیر معیاری سلنڈروں کی تیاری کا سلسلہ جاری ہے اور کمپنیوں کے تصدیق شدہ سلنڈروں سے سستے ہونے کے باعث انہیں گاڑیوں میں نصب کر لیا جاتا ہے، جب بھی ایسا حادثہ ہو تو پڑتال کا اعلان اور سلسلہ شروع کر دیا جاتا ہے، لیکن اس کے بعد لمبی تان لی جاتی ہے۔ اس لاقانونیت کا مستقل سدباب ضروری ہے۔ جن محکموں کی ذمہ داری ہے کہ وہ قواعد و ضوابط کو نافذ کرائیں ان کے ذمہ داران کے خلاف جب تک سخت کارروائی نہیں ہو گی، انہیں حرکت میں نہیں لایا جا سکے گا۔

مزید :

رائے -اداریہ -