شفاف اور غیر جانبدارانہ خود احتسابی محکمہ کی اولین ترجیح: آئی جی پنجاب 

  شفاف اور غیر جانبدارانہ خود احتسابی محکمہ کی اولین ترجیح: آئی جی پنجاب 

  

  لاہور(کر ائم رپو رٹر)انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب انعام غنی نے کہاہے کہ پہلے جزا پھر سزا کی پالیسی کے تحت افسران و اہلکاروں کی شفاف اور غیر جانبدار انہ خود احتسابی محکمہ کی اولین ترجیح ہے جس کا مقصددوران ڈیوٹی غیر ذمہ داری، اختیارات سے تجاوز یا قانون شکنی کے مرتکب پولیس ملازمین کے خلاف بلا تاخیر محکمانہ و قانونی کارروائی کو یقینی بنانا ہے انہوں نے مزیدکہا کہ صوبے کے کسی بھی ریجن یا ضلع میں کسی پولیس افسر یا اہلکار کے خلاف ایف آئی آر درج ہوتو انٹرنل اکاؤنٹیبلٹی برانچ اس کی از خود  انکوائری کرے انہوں نے مزیدکہاکہ ریجنل اور ڈسٹرکٹ مانیٹرنگ یونٹس پولیس افسران و اہلکاروں پر درج مقدمات اور ان پر ہونے والی پراگریس کی کلوز مانیٹرنگ کویقینی بنائیں جبکہ ایڈیشنل آئی جی انویسٹی گیشن ان مقدمات کی مانیٹرنگ اورہونے والے ایکشن بارے باقاعدگی سے رپورٹ لیتے رہیں انہوں نے مزیدکہاکہ اگر پولیس ملازم کے خلاف ایف آئی آر جھوٹی ثابت ہو تو ایسے مقدمات کی اجازت دینے والے افسران سے جواب طلبی کی جائے جبکہ جہاں مقدمہ کے اندراج کے بعد متعلقہ افسر یا اہلکار کے خلاف محکمانہ کاروائی نہ ہو تو سپروائزری افسر سے اس بارے جواب طلبی ہوگی انہوں نے مزیدکہاکہ اگر کوئی افسر یا اہلکار معطل کیا گیا اور اس کی انکوائری مقررہ مدت میں مکمل نہ ہو تومتعلقہ سینئر افسرسے اس بارے وضاحت طلب کی جائے ان خیالات کا اظہار سنٹرل پولیس آفس میں انٹرنل اکاؤنٹیبلٹی سے متعلقہ امور بارے اجلاس کی صدارت کے دوران افسران کو ہدایات دیتے ہوئے کیا  میٹنگ میں ایڈیشنل آئی جی اسٹیبلشمنٹ علی عامر ملک، ایڈیشنل آئی جی آپریشنز صاحبزادہ شہزاد سلطان، ایڈیشنل آئی جی انویسٹی گیشن فیاض احمد دیو، ڈی آئی جی اسٹیبلشمنٹ -ٰٰIIمقصود الحسن، ڈی آئی جی لیگل ڈاکٹر معین مسعود، ڈی آئی جی آئی اے بی، یوسف ملک، ڈی آئی جی آر اینڈ ڈی، شاہد جاوید، ڈی آئی جی اسٹیبلشمنٹI-شیر اکبر اور ڈی آئی جی آئی ٹی وقاص نذیر سمیت دیگر افسران بھی موجود تھے۔  

مزید :

علاقائی -