4 بچیوں کے اغواء میں ملوث 5ملزمان کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع

  4 بچیوں کے اغواء میں ملوث 5ملزمان کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع

  

لاہور(نامہ نگار)ضلع کچہری کے جوڈیشل مجسٹریٹ ایاز رفیق لون نے ہنجروال کے علاقہ سے چار بچیوں کے اغواء کے مقدمہ میں ملوث پانچ ملزموں کے جسمانی ریمانڈ میں مزیددو روز کی توسیع کردی،عدالت نے ایک بچی کا ڈی این اے کروانے کی پولیس کی استدعابھی منظور کرلی ملزموں قاسم، نعیم، شہزاد،آصف اور کاشف کو چار روزہ جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے پرپولیس نے عدالت میں پیش کیا،پولیس نے 

عدالت کو بتایا کہ ملزمان چار بچیوں کو اغوا کرلے لاہور سے ساہیوال لے گئے کیس میں دو خواتین ملزمہ شازیہ اور زینب بھی شامل ہیں، جوجوڈیشل ریمانڈ پر ہیں،بچیوں میں کنزہ، انعم،عائشہ اور سمرین شامل ہیں،بچیوں کی عمریں 121سے 14سال کے درمیان ہیں،تفتیشی افسرنے عدالت کو بتایا کہ ایک بچی کا میڈیکل مشکوک ہے،ایک بچی سے بداخلاقی کے امکان دکھائے دیتے ہیں،عدالت سے استدعاہے کہ ملزمان کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع کے ساتھ بچی کا ڈی این اے کروانے کا حکم بھی دیاجائے،عدالت نے ملزمان کے جسمانی ریمانڈ میں دو روز کی توسیع کرتے ہوئے بچی کا ڈی این اے کروانے کا حکم دیتے ہوئے سماعت آئندہ پیشی تک ملتوی کردی۔

مزید :

علاقائی -