سپریم شیعہ علماء بورڈ کا محرم الحرام پر 16نکاتی ضابطہ عزاداری کا اعلان 

سپریم شیعہ علماء بورڈ کا محرم الحرام پر 16نکاتی ضابطہ عزاداری کا اعلان 

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)سپریم شیعہ علماء بورڈ کے سرپرست اعلی قائد ملت جعفریہ آغا حامد موسوی نے آمدہ محرم 16 نکاتی ضابطہ عزاداری کا اعلان کر دیا۔ ہیڈ کوارٹر مکتب تشیع میں سنی شیعہ علماء کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عزاداری ہماری شہ رگ حیات اور بنیادی حق ہے کسی قسم کی رخنہ اندازی ہم نے نہ پہلے برداشت کی نہ اب کریں گے عزاداروں کو شیڈول فور سے ڈرانے دھمکانے اور امام بارگاہوں کے اندر عزاداریاں روکنے کا نوٹس لیا جائے۔ ماسک لگا کر کوئی ذاکرمجلس نہیں پڑھ سکتا ایس او پیز کو قابل عمل بنایا جائے افغانستان کے حالات سے خوفزدہ نہیں بڑے بڑے ظالم مٹ گئے ذکر حسین عزاداری آج بھی باقی ہے، طالبان اپنے نام کی لاج رکھتے ہوئے عدل و انصاف کو ترجیح دیں،جو صحابہ کرام کی توہین کرے گا وہ ہم میں سے نہیں، تاریخ کے بیان کو توہین نہ گرداناجائے پیغمبر اسلام، آل محمداور پاکیزہ صحابہ کی شان میں کسی قسم کی گستاخی اور توہین ہمارے ایمان او ر وطن کی اساس پر حملہ ہے،آئمہ اہلبیت کی توہین پر حکومت نے کوئی قدم نہیں اٹھایا۔ضابطہ عزاداری کے نکات بیان کرتے ہوئے آغا حامد موسوی نے مطالبہ کیا کہ جلوسہائے عزا کی برآمدگی کے سلسلے میں حکومت21مئی 85ء کے معاہدے کی پاسداری کرے،مجالس اور ماتمی جلوسوں میں وقت کی پابندی اور نظم و ضبط کو ملحوظ رکھا جائے،مجالس عزا کے مقامات اور جلوس کے راستوں پر روشنی و صفائی کے موثر انتظامات کیے جائیں، عزاداروں کے ممکنہ مسائل کے حل کیلئے وزارتِ داخلہ،وفاقی دارالحکومت،تمام صوبوں بشمول آزاد کشمیر،گلگت بلتستان میں عزاداری سیل کنٹرول روم قائم کیے جائیں تو8ربیع الاول تک کام کریں اور انکی بذریعہ میڈیا تشہیر کی جائے کنٹرول رومز کو ٹی این ایف جے کی مرکزی محرم کمیٹی عزاداری سیل سے مربوط کیا جائے،شورش زدہ اور حساس شہروں کو فوج کے حوالے کیا جائے اور ماتمی جلوسوں،مجالس عزا کے دوران قبل ازوقت موثر حفاظتی اقدامات کیے جائیں،کسی شخص کو قانون ہاتھ میں لینے کی ہرگز اجازت نہ دی جائے۔

آغا حامد موسوی

مزید :

صفحہ آخر -