کرونا سے 6ہلاکتیں، سرکاری ہسپتالوں میں ہائی الرٹ کا حکم 

کرونا سے 6ہلاکتیں، سرکاری ہسپتالوں میں ہائی الرٹ کا حکم 

  

 ملتان، ڈیرہ، بہاولپور(وقائع نگار، نیوز رپورٹر، سٹی رپورٹر، بیورو رپورٹ، نامہ نگار) نشتر ہسپتال ملتان میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا میں مبتلا  دو نئے مریض جاں بحق ہوئے ہیں۔جس کے بعد اموات کی مجموعی  تعداد 878 تک جاپہنچی ہے۔تفصیل کے مطابق نشتر ہسپتال کے آئی سو لیشن وارڈز میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا میں مبتلا ملتان کے 65 سالہ عبدالوحید اور لیہ کے 70 سالہ(بقیہ نمبر24صفحہ10پر)

 محمد رمضان نے دم توڑ دیا ہے۔اس طرح یکم اپریل 2020  سے 9 اگست  2021 کے درمیان کورونا کے باعث ہونے والی اموات کی مجموعی تعداد 878 تک جاپہنچی ہے۔نشتر ہسپتال میں زیر علاج کورونا کہ مریضوں کی تعداد 27 ہو گئی ہے۔ کورونا کے شبہ میں  داخل 44 مریضوں کی رپورٹس کا انتظار  ہے۔رواں  سال نشتر ہسپتال میں کورونا کے شبہ میں سات ہزار 144 افراد داخل ہوئے ہیں۔ جن میں سے دو ہزار 777 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے۔ ٹیچنگ ہسپتال ڈی جی خان کے کرونا وارڈ میں داخل ایک خاتون سمیت چار مریض چل بسے،26مریض ہسپتال میں داخل، 06 نئے کرونا کیسزمثبت آگئے،جبکہ 16مریضوں میں کرونا کاخدشہ،2 کی حالت تشویشناک اور 4 مریض ونٹیلیٹرز پر آ گئے تفصیلات کے مطابق ٹیچنگ ہسپتال ڈی جی خان کے فوکل پرسن ڈاکٹر خالد تحسین نے بتایا کہ ٹیچنگ ہسپتال کے کرونا وارڈ میں داخل26 مریضوں میں سے رکنی کی رہائشی ایک خاتون بیگم مائی،تونسہ سے تعلق رکھنے والا گل محمد،ڈیرہ شہر ماڈل ٹاؤن کا رہائشی پیر بخش اور پائیگاہ کا رہائشی حاجی عاشق اس فانی دنیا سے کوچ کرگئے،6 نئے مریضوں کے کروناکیسز مثبت آگئے جبکہ ہسپتال میں داخل 16مریضوں میں کرونا کا خدشہ پایا جارہا ہے2 مریضوں کی حالت انتہائی خطرناک اور 4مریض ونٹیلیٹرز پر ہیں فوکل پرسن ڈاکٹر خالد تحسین نے کہا کہ کرونا ایک خطرناک وباء ہے حکومتی ایس او پیز پرعمل کرکے اس سے محفوظ رہاجاسکتا ہے شہری حکومتی ایس اوپیز پر عملدرآمد یقینی بنائیں۔سیکرٹری صحت جنوبی پنجاب نے کورونا کی چوتھی لہر کی شدت کے پیش نظر جنوبی پنجاب کے تمام سرکاری اسپتالوں کو الرٹ رہنے کی ہدایت کردی۔ سیکرٹری صحت جنوبی پنجاب محمد اجمل بھٹی نے جنوبی پنجاب کے تمام چیف ایگزیکیٹو افسران کو جاری کردہ ہدایات میں کہا ہے کہ جنوبی پنجاب سمیت ملک بھر میں کورونا کی چوتھی لہر کے باعث مثبت کیسوں میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔ جنوبی پنجاب کے تمام سرکاری اسپتالوں میں کورونا کے مریضوں کے لیے طبی سہولیات میں اضافہ کیا جارہا ہے۔ جنوبی پنجا ب کے تمام سرکاری اسپتالوں میں ڈاکٹرز، نرسز، پیرامیڈیکل اسٹاف، مریضوں اور ان کے لواحقین سے ماسک پہننے کی پابندی کو ہرصورت یقینی بنایا جائے او ر جنوبی پنجاب میں کورونا ویکسینیشن کو زیادہ سے زیادہ لوگوں کو لگا یا جائے تاکہ کورونا وائرس کی بڑھتی ہوئی شرح کو موثر طور پر کنٹرول کیا جاسکے۔ دیگر تفصیلات کے مطابق جنوبی پنجاب میں اب تک تصدیق شدہ کل کورونا مثبت مریضوں کی تعداد 48578ہے جن میں سے 45556افراد کورونا سے صحت یاب ہوچکے ہیں۔ جنوبی پنجاب میں اب تک کورونا سے 1455افراد زندگی کی بازی ہار چکے ہیں۔ جبکہ 151کل کورونا مثبت مریض اس وقت جنوبی پنجاب میں موجود ہیں۔ جنوبی پنجاب میں اب تک کل 1لاکھ 70ہزار 564لوگوں کے کورونا ٹیسٹ کیے جاچکے ہیں۔ اسی طرح جنوبی پنجاب میں اب تک  ہیلتھ ورکرز اور سرکاری ملازمین کو کورونا ویکسین کی پہلی خوراک2لاکھ 1934 جبکہ دوسری خوراک تقریبا 85ہزارلگائی جاچکی ہیں۔ اور جنوبی پنجاب میں 37لاکھ 59ہزار611 افراد کو کورونا ویکسین کی پہلی خوراک جبکہ تقریبا 8لاکھ افراد کو کورونا ویکسین کی دوسری خوراک لگائی جاچکی ہے کمشنر،ڈپٹی کمشنر،ڈی پی او سمیت دیگر سرکاری دفاتر میں سائلین صرف اسی صورت میں داخل ہو سکیں گے جب ان کے پاس کرونا ویکسین سرٹیفکٹ ہو گا بغیر سرٹیفکٹ داخلے پر پابندی ہو گی اور جن افراد نے کرونا وائرس سے بچاؤ کیلئے ویکسین نہیں لگو ائی ہو گئی ان کو ویکسین سنٹرز میں بھیجا جائیگاجہاں سے وہ ویکسین کروا کر ان دفاتر میں داخل ہو سکیں گے۔ڈپٹی کمشنر علی شہزاد کی ہدایت پر گراں فروشی اور کرونا ایس او پیز کی خلاف ورزیوں پر گزشتہ روز بھی کریک ڈاون کیا گیا۔اس سلسلے میں اسسٹنٹ کمشنر سٹی خواجہ عمیر محمود اور سیکرٹری آر ٹی اے رانا محسن نے بھی کارروائیاں کیں۔کریک ڈاون کے دوران کرونا ایس او پیز پر عملدرآمد نہ کرنے پر 2 ہوٹل اور 6دکانیں سیل کردی گئیں جبکہ پرائس کنٹرول مجسٹریٹس نے گراں فروشی پر 3 لاکھ روپے سے زائد کا جرمانہ بھی عائد کیا۔آپریشن کے دوران ضلعی انتظامیہ کی انسپکشن ٹیموں نے ضلع میں 360 مقامات کی انسپکشن کرکے کرونا ایس او پیز کو چیک کیا اور عوام کو آگاہی بھی دی۔ڈپٹی کمشنر علی شہزاد نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ مہنگائی کا جن کسی صورت بوتل سے باہر نہیں آنے دینگے۔گراں فروشی روکنے کیلئے طلب و رسد کے نظام کی سختی سے مانیٹرنگ کررہے ہیں۔ علی شہزاد کا کہنا تھا کہ محرم الحرام کے دوران بھی پرائس کنٹرول کریک ڈاؤن جاری  ہے۔

کرونا وائرس

مزید :

ملتان صفحہ آخر -