اسلام آباد چیمبراور اقوام متحدہ کے تربیتی ادارے کے مابین باہمی تعاون پر غور

اسلام آباد چیمبراور اقوام متحدہ کے تربیتی ادارے کے مابین باہمی تعاون پر غور

اسلام آباد ( کامرس ڈیسک) یونایئٹڈنیشنز کے ادارہ برائے ایشین اینڈ پیسفک ٹریننگ سنٹر فار انفارمیشن اینڈ کمیونیکیشن ٹیکنالوجی فار ڈویلپمنٹ کی ڈائریکٹر مز ہیون سک ری نے پاکستان انسٹیٹیوٹ آف آئی سی ٹیز کے چیف ایگزیکٹو عمار جعفری کے ہمراہ اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کا دورہ کیا اورخواتین انٹرپرینیورز کو انفارمیشن اینڈ کمیونیکیشن ٹیکنالوجی کی تربیت فراہم کرنے کےلئے چیمبر کے ساتھ باہمی تعاون کے امور پر تبادلہ خیال کیا تا کہ خواتین آئی سی ٹیز کا استعمال کر کے اپنے کاروبار کو بہتر فروغ دے سکیں۔ یواین اے پی سی آئی سی ٹی کی ڈائریکٹر نے کہا کہ ان کا ادارہ آئی سی ٹی کے استعمال کے ذریعے کاروبار کو فروغ دینے کیلئے 30ممالک میں کام کر رہا ہے۔

 تا کہ متعلقہ ممالک پائیدار اقتصادی ترقی کی راہ پر گامزن ہو سکیں اور ان کا پاکستان کا دورہ کرنے کا مقصد خواتین انٹرپرینیورز کو آئی سی ٹی کے استعمال کی تربیت فراہم کرنا ہے تا کہ وہ اس ٹیکنالوجی کو استعمال کر کے علاقائی اور انٹرنیشنل سطح پر اپنی پراڈیکٹس کو متعارف کرا سکیں۔ انہوں نے کہا کہ اس مقصد کیلئے ان کے ادارے کو خواتین انٹرپرینیورز کی ضروریات کے بارے میں آگاہی حاصل کرنا ہے تا کہ ان کیلئے بامقصد تربیتی پروگرام تیار کئے جا سکیں۔ دونوں اداروں نے خواتین انٹرپرینیورز کو مزید طاقتور بنانے اورکاروبار کے فروغ کیلئے آئی سی ٹی کے استعمال کی حوصلہ افزائی کرنے کیلئے مختلف آپشنز پر تعاون کرنے غور کیا۔ اسلام آباد چیمبر آف کامرس نے اس موقع پر نوجوانوں اور خاص طور پر خواتین کو کاروبار کی طرف راغب کرنے کیلئے کی گئی کوششوں پر روشنی ڈالی۔ اس موقع پر خواتین انٹرپرینیورز نے کاروبار کے فروغ کیلئے آئی سی ٹی کو استعمال کرنے کے راستے میں حائل مشکلات کے بارے میں آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ کمپیوٹر کے بارے میں مناسب تعلیم کی کمی، مالی وسائل کی کمی، نیٹ ورکنگ کا فقدان وغیرہ کی وجہ سے خواتین انٹرپرنیورز کاروبار کو ترقی دینے کیلئے آئی سی ٹی کا استعمال کرنے سے قاصر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں مزید ایسے تربیتی ادارے قائم کئے جائیں جو خواتین انٹرپرنیورز کو آئی سی ٹی کی بہتر تربیت فراہم کر سکیں تا کہ وہ اس جدید ٹیکانالوجی کے ذریعے اپنی کاروبار کو وسعت دے سکیں۔    پاکستان انسٹیٹیوٹ آف آئی سی ٹیز فار ڈویلپمنٹ کے چیف ایگزیکٹو نے کہا کہ یواین اے پی سی آئی سی ٹی پہلے ہی پاکستان میں سول سرونٹس کی استعداد کار کو بہتر کرنے اور مستقبل کے لیڈر تیار کرنے کے منصوبوں پر کام کر رہا ہے اور اب یہ ادارہ پاکستان کی خواتین انٹرپرینیورز کو آئی سی ٹی کی تربیت فراہم کر نا چاہتا ہے تا کہ وہ اس ٹیکنالوجی کے ذریعے اپنے کاروبار کو مزید وسعت دے سکیں۔

مزید : کامرس