خدا کیلئے حکومت شہریوں کی سیکیورٹی کیلئے سنجیدگی دکھائے، لاہور ہائیکورٹ

خدا کیلئے حکومت شہریوں کی سیکیورٹی کیلئے سنجیدگی دکھائے، لاہور ہائیکورٹ

 لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ کے فل بنچ نے 15دسمبر کو لاہور اور 18دسمبر کو پورا پاکستان بند کرنے سے متعلق تحریک انصاف کے اعلان کے پیش نظر پنجاب حکومت اور لاہور پولیس سے سکیورٹی پلان طلب کر تے ہوئے ریمارکس دیئے کہ خدا کے لئے حکومت شہریوں کی سکیورٹی کے لئے سنجیدگی دکھائے، یہ وقت جاگنے کا ہے مگر حکومت پتہ نہیں کیوں سو رہی ہے ۔مسٹر جسٹس خالد محمود خان ، مسٹر جسٹس شاہد حمید ڈار اور مسٹر جسٹس انوار الحق پر مشتمل فل بنچ نے تاجررہنما نعیم میر کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ 15دسمبر کو تحریک انصاف نے لاہور بند کرنے کا اعلان کیا ہے اور فیصل آباد کے واقعہ سے لگتا ہے کہ لاہور میں بھی خون خرابے ہو سکتا ہے لہذا تاجروں اور عوام کو تحفظ فراہم کرنے کا حکم دیا جائے ، پنجاب حکومت کے ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل عبدالعزیز اعوان نے بنچ کو بتایا کہ امن و امان کو برقرار رکھا جائے گا، دوران سماعت جسٹس شاہد حمیدڈار نے ریمارکس دیئے کہ خدا کے لئے حکومت شہریوں کی سکیورٹی میں سنجیدگی دکھائے، یہ وقت جاگنے کا ہے مگر حکومت پتہ نہیں کیوں سو رہی ہے ، مسٹر جسٹس خالد محمود خان نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ پہلی حکومتوں نے بھی عوام کو دھوکے میں رکھا اور آدھا ملک چلا گیا، جنرل یحییٰ کے الفاظ ابھی تک یاد ہیں کہ دشمن کو ہماری لاش سے گزر کر جانا پڑے گا، یہ کوئی طریقہ نہیں کہ پہلے 14شہری جاں بحق ہوئے اور کل ایک فیصل آباد میں مر گیا، فل بنچ نے پنجاب حکومت کو حکم دیا کہ 15 اور18دسمبرکو شہر اور ملک بند کرنے کی کال کو پیش نظر رکھ کرجو سکیورٹی پلان تیار کیا گیا ہے اسے آج 10دسمبر کوعدالت میں پیش کیا جائے ۔

مزید : صفحہ آخر