غریب باپ کی18 سالہ سعودی لڑکی 15 ملین ریال کی مالک بن گئی

غریب باپ کی18 سالہ سعودی لڑکی 15 ملین ریال کی مالک بن گئی

ریاض (این این آئی)سعودی عرب سے تعلق رکھنے والی ایک 18 سالہ لڑکی 15 ملین ریال کی مالک بن گئی ہے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ایک سعودی شہری قرض کی عدم ادائیگی کی وجہ سے سخت پریشان تھا۔ اچانک بڑی عمر کے ایک دولت مند شخص نے اسے قرض سے نجات دلانے کے لیے پیشکش کی۔ اس نے مقروض شہری سے کہا کہ وہ اپنی نوجوان بیٹی کا اگر اس سے نکاح کر دے تو تو وہ اس کا سارا قرض اتار دے گا۔ یہ تجویز سن کر مقروض شہری نے بیٹی کو سارا ماجرا بیان کرکے اس کی رضامندی طلب کی۔ بیٹی نے بوڑھے امیر سے شادی سے انکار کر دیا۔ باپ سے گفتگو کرتے ہوئے لڑکی کی ایک چھوٹی بہن جس کی عمر 18 سال تھی کو جب پتا چلا تو اس نے دونوں کا مسئلہ حل کراتے ہوئے خود کو بوڑھے امیر کے ساتھ شادی کے لیے پیش کر دیا۔ مقروض شخص نے امیر بوڑھے تک یہ بات پہنچائی تو وہ بزرگ چھوٹی لڑکی سے نکاح پر آمادہ ہو گیا ظاہر کر دی۔کچھ عرصہ بعد دونوں میں نکاح ہو گیا۔ تاہم اچانک اس بوڑھے شخص کا انتقال ہو گیا اور غریب لڑکی اپنے شوہر کے ترکے سے حاصل 15 ملین ریال کی بھاری رقم لے کر اپنے والد کے گھر آ گئی۔

مزید : عالمی منظر