جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ کرکے زرعی اجناس کی پیداوار میں شاندار اضافہ یقینی بنایاجاسکتاہے،چوہدری عبداللطیف سہو

جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ کرکے زرعی اجناس کی پیداوار میں شاندار اضافہ یقینی ...

فیصل آباد(بیورورپورٹ)پاکستان کسان ویلفیئرکونسل کے چیئر مین چوہدری عبداللطیف سہو نے کہا ہے کہ ہمارے کاشتکار سالہا سال سے رائج فرسودہ طریقہ کاشتکاری کے ذریعے فصلات کاشت کر رہے ہیں جس سے پیداوار میں بھی کمی ہوتی جا رہی ہے لہٰذا جب تک جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ نہیں کیا جاتا اس وقت تک زراعت میں ترقی نہیں لائی جا سکتی ۔ میڈیاسے بات چیت کے دوران انہوں نے کہا کہ کاشتکاروں کو چاہیے کہ وہ اپنے بچوں کو بھی زراعت کی تعلیم دلوا کر کاشتکار ی کے پیشہ کی طرف راغب کریں تاکہ وہ جدید رجحانات کے مطابق سائنسی بنیادوں پر جدید ٹیکنالوجی استعمال کرتے ہوئے اپنی پیداواری صلاحیت میں بھر پور اضافہ کر سکیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان بنیادی طو رپر ایک زرعی ملک ہے جس کی معیشت کا تمام تر دار و مدار بھی زراعت پر ہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ امر افسوسناک ہے کہ زرعی ترقی کیلئے دعوے تو کئے جاتے ہیں لیکن عملی طور پر کاشتکار کا استحصال کیا جاتا ہے جس کے باعث وہ زرعی پالیسیوں سے نالاں نظر آتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر معیشت کو مضبوط بنانا ہے تو حکومت کو سنجیدگی سے اس جانب سوچنا اور عمل کر کے دکھانا ہو گا۔

مزید : کامرس