بد عنوانی عالمی سطح پر ریاستوں کے استحاکام، سماجی و معاشی ڈھانچے کیلئے خطرہ ہے: ممنون حسین

بد عنوانی عالمی سطح پر ریاستوں کے استحاکام، سماجی و معاشی ڈھانچے کیلئے خطرہ ...

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) صدر مملکت ممنون حسین نے کہا کہ بدعنوانی ایسی لعنت ہے جو عالمی سطح پر ریاستوں کے استحکام، ان کے سماجی و معاشی ڈھانچے کیلئے خطرہ ہے،بدعنوانی کے باعث ناانصافی اور محرومیاں پھیلتی ہیں،انتہاء پسندی و دہشت گردی کو تقویت مل رہی ہے، ملوث افراد کو عبرتناک سزائیں دی جائیں اور پراسیکیوشن کا طریقہ کار آسان بنایا جائے، نیب انتہائی اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کر رہا ہے ۔بدھ کو عالمی یوم انسداد بدعنوانی کے موقع پر ایوان صدر میں نیب کے زیر اہتمام تقریب کا انعقاد کیاگیا جس کی صدارت صدر مملکت ممنون حسین نے کی ۔ اس موقع پر وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر پرویز رشید اور چیئرمین نیب قمرزمان چوہدری سمیت ایشیائی ترقیاتی بینک ، یو این او ڈی سی کے نمائندوں نے بھی خطاب کیا۔ صدر مملکت ممنون حسین نے کہا کہ آج کا دن بدعنوانی کے خلاف متحد ہونے کیلئے عزم نو کا دن ہے تا کہ زندگی کے مختلف شعبوں میں پھیلی ہوئی کرپشن جیسی سماجی برائی کے خلاف بیداری پیدا کر کے وطن عزیز کو اس ناسور سے پاک کیا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ بدعنوانی ایسی لعنت ہے جو عالمی سطح پر ریاستوں کے استحکام، ان کے سماجی و معاشی ڈھانچے کیلئے خطرے کے طور پر ابھر رہی ہے اور یہ دنیا میں تیزی سے پھیل رہی ہے۔ صدر مملکت نے کہاکہ بدعنوانی کے باعث ناانصافی اور محرومیاں پھیلتی ہیں،اس سے انتہاء پسندی اور دہشت گردی کو تقویت مل رہی ہے اور معاشرے کے مسائل پیچیدہ کر دیئے ہیں، بدعنوانی کے مسئلے کا حل جمہوری عمل میں ہے،عوام اپنے حق رائے دہی استعمال کر کے بدعنوان عناصرکو مسترد کریں اور اچھی حکمرانی کو فروغ دیا جا سکے۔ وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر پرویز رشید نے کہا ہے کہ کرپشن کا عالمی دن پوری دنیا کیلئے اہمیت کا حامل ہے، نیب کرپشن کے خلاف جدوجہد کرنے والا سب سے بڑا ادارہ ہے جو اس لعنت کو جڑ سے اکھاڑنے میں مصروف عمل ہے۔ انہوں نے کہا کہ کرپشن کو سمجھنا آسان عمل نہیں ، اس ناسور نے دنیا کے سب ملکوں کو کم یا زیادہ سیاسی، سماجی اور معاشی طور پر نقصان پہنچایا، اس سے حکومتی کارکردگی اور ادارے متاثر ہوتے ہیں، سرمایہ کاری نہیں آتی اور معاشرے میں عدم اعتماد کی فضاء پیدا ہو جاتی ہے، چھوٹے چھوٹے مفادات کی خاطر بنیادی اقدار پامال کر دیئے جاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے کرپشن کے خاتمے کو اپنی ترجیحات میں شامل کر رکھا ہے اور بلا امتیاز احتساب کو کلیدی حیثیت دی گئی ہے،کرپشن کے خاتمے کیلئے زیرو ٹالرنس کی اصطلاح استعمال کی جاتی ہے، موجودہ حکومت کا ایک بھی کرپشن اسکینڈل سامنے نہیں آیا،ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ کے مطابق پاکستان پہلے175 ویں نمبر پر تھا اوراب 126ویں نمبر پر آ گیا ہے جو موجودہ حکومت نے 20سالوں میں ریکارڈ کرپشن کا خاتمہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کوشاں ہے کہ کرپشن کے ناسور کو جڑ سے اکھاڑ دیا جائے،اس کامیابی سے دنیا میں ہماری عزت و وقار میں اضافہ ہو گا اور بیرونی سرمایہ کاروں کو اعتماد بھی مزید بڑھے گا۔چیئرمین نیب قمرزمان چوہدری نے کہا کہ کرپشن کی لعنت ہمیں ورثے میں ملی ہے،1947ء میں قائداعظم محمد علی جناح نے نئی حکومت کی ترجیحات کا تعین کیا تو اس میں کرپشن کا خاتمہ بھی شامل تھا، قائداعظم محمد علی جناح نے کہا تھا کہ انڈیا کرپشن کا شکار ہے،ہم کرپشن سے آہنی ہاتھوں سے نمٹیں گے۔ انہوں نے کہا کہ نیب کرپشن کے خاتمے کیلئے جدوجہد کر رہا ہے اور بغیر کسی خوف کے معاشرے سے اس ناسور کو ختم کرنے کیلئے پرعزم ہیں،نیب آزادانہ اور بغیر کسی مداخلت کے اپنے فرائض سرانجام دے رہا ہے

مزید : صفحہ اول