پاکستان اور بھارت کا جامع مذاکرات دوبارہ شروع کرنے پر اتفاق، کشمیر ایجنڈے میں شامل

پاکستان اور بھارت کا جامع مذاکرات دوبارہ شروع کرنے پر اتفاق، کشمیر ایجنڈے ...

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیر اعظم نواز شریف اور بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج میں ملاقات ہوئی جس میں دونوں ملکوں کے درمیان مذاکرات میں پیداہونے والے ڈیڈلاک کو ختم کرنے کے حوالے سے گفتگو کی گئی۔ بھارتی وزیر خارجہ نے نواز شریف کو بھارتی وزیراعظم مودی کا اہم پیغام پہنچایا۔ ذرائع کے مطابق بھارتی وزیراعظم نے اپنے پیغام میں پاکستانی عوام کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے دونوں ممالک میں امن کی ضرورت پر زور دیا۔اس کے علاوہ بھارتی وزیر اعظم نریندر امودی کے آئندہ سال پاکستان کے دورہ کے حوالے سے تبادلہ خیال بھی ہوا۔دونوں رہنماؤں کے درمیان ملاقات ایک گھنٹہ جاری رہی۔ذرائع کے مطابق نوازشریف اور سشما سوراج کی ملاقات میں پاک بھارت کرکٹ سیریز کے حوالے سے کوئی بات نہیں کی گئی۔نواز شریف نے پاکستان آمد پر سشما سوراج کا شکریہ ادا کیااور کہا کہ پاکستان بھارت سمیت تمام ممالک سے دوستانہ تعلقات کا خواہش مند ہے۔ملاقات میں دونوں طرف سے اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ تمام دیرینہ مسائل کا حل مذاکرات سے ہی نکالا جائے گا۔ملاقات میں پاکستان کی طرف مشیر خارجہ سرتاج عزیز،طارق فاطمی اور لیفٹیننٹ جنرل (ر) ناصر جنجوعہ جبکہ بھارت کی طرف سے بھارتی ہائی کمشنر اور دیگر اعلیٰ حکام شریک ہوئے۔واضح رہے کہ 2012 کے بعد کسی بھی بھارتی وزیر کی جانب سے یہ پہلا دورہ پاکستان ہے۔ بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں شرکت کیلئے پاکستان آئی ہوئی ہیں۔

اسلام آباد(مانیٹر نگ ڈیسک،اے پی پی)پاکستان اور بھارت نے جامع مذاکرات دوبارہ شروع کرنے پر اتفاق کر لیا ہے۔بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج اور مشیر خارجہ سرتاج عزیز نے مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے جامع مذاکرات شروع کرنے کا اعلان کیا۔اس موقع پر بھارتی ویزر خارجہ سشما سوراج کا کہناتھاکہ اب جامع مذاکرات ہوں گے اور جہاں سے مذاکرات منسوخ ہو ئے اور جن امور پر بات چیت جہاں رکی وہیں سے دوبارہ شروع کی جائے گی ،جس کیلئے سیکریٹر ی خارجہ کو اعلیٰ سطح کے رابطوں کی ہدایت کر دی گئی ہے۔سشما سوراج کا کہناتھا کہ سیکریٹری خارجہ آپس میں بات چیت کریں گے جس میں مذاکرات کی تاریخ اور طریقہ کار واضح کیا جائے گا جبکہ انہوں نے کہا کہ وہ بھارت جا کر پارلیمنٹ میں مذاکرات کی بحالی کے بارے میں اپنا بیان دیں گی ۔دفتر خارجہ کی طرف سے جاری کردہ پاکستان اور بھارت کے مشترکہ اعلامیہ کے مطابق مشیر خارجہ سرتاج عزیز اور بھارتی وزیر خارجہ نے دہشت گردی کی مذمت اور اس کے خاتمے کیلئے تعاون کا عزم ظاہر کیا۔ انہوں نے دونوں ممالک کے قومی سلامتی مشیران کے بنکاک میں دہشت گردی اور سلامتی سے متعلق ایشوز پر کامیاب مذاکرات کو نوٹ کیا اور فیصلہ کیا کہ قومی سلامتی کے مشیران دہشت گردی سے متعلقہ تمام ایشوز پر توجہ مرکوز رکھیں گے۔ بھارت کی جانب سے ممبئی ٹرائل کو تیزی سے جلد مکمل کرنے کیلئے اٹھائے جانے والے اقدامات کی یقین دہانی کرائی گئی۔ دونوں اطراف نے جامع مذاکرات پر اتفاق کیا اور خارجہ سیکرٹریوں کو امن و سلامتی، اعتماد سازی اقدامات، جموں و کشمیر، سیاچن، سرکریک، وولربیراج/تلبل نیوی گیشن پراجیکٹ ، اقتصادی و تجارتی تعاون، انسداد دہشت گردی، نارکوٹکس کنٹرول، انسانی ہمدردی کے امور، عوامی سطح پر تبادلوں اور مذہبی سیاحت سمیت مذاکرات کے تحت اجلاسوں کے طریقہ ہائے کار اور شیڈول وضع کرنے کی ہدایت کی گئی۔

مزید : صفحہ اول