صوابی ،معصوم بچے کے قتل میں ملوث ملزم کو سزائے موت

صوابی ،معصوم بچے کے قتل میں ملوث ملزم کو سزائے موت

صوابی( بیوررپورٹ)ایڈیشنل سیشن جج صوابی چار کی عدالت نے موضع کڈی کے بارہ سالہ معصوم بچے کے قتل کے مشہور مقدمہ کا فیصلہ سناتے ہوئے ملزم کو سزائے موت ، دو سال قید اور بیس ہزار روپے جر مانے کی سزا کا حکم سنا دیا۔ تفصیلات کے مطابق پانچ جون 2014کو موضع کڈی میں ڈاکٹر محمد یزدانی کا بارہ سالہ بیٹا محمد ہمدانی نماز مغرب کے وقت لاپتہ ہو چکا تھا اور بعد ازاں اگلی صبح ان کی قتل شدہ لاش ملی زیدہ پولیس نے نامعلوم ملزمان کے خلاف ایف آئی آر درج کر کے جدید خطوط پر اس اندھے قتل کا سراغ لگا کر ملوث ملزم شہباز ولد محمد طارق سکنہ پنج پیر کو گرفتار کر لیا اس نے بچے کے ساتھ زیادتی اور بعد ازاں قتل کا اعتراف کیا پولیس نے اس کیس کا چالان عدالت میں پیش کیا۔ جس پرایڈیشنل سیشن جج صوابی چارملک امجد رحیم کی عدالت نے کیس کی سماعت مکمل کرکے ملزم پر جرم ثابت ہونے پربچے کے ساتھ زیادتی پر دو سال قید ، بیس ہزار روپے جر مانہ جب کہ قتل کے جرم پر ملزم کو سزائے موت کا حکم سنا دیا۔ مقتول فریق کی جانب سے اس کیس کی پیروی ممتاز قانون دان میاں شیر اکبر خان ایڈوکیٹ نے جب کہ ملزم کی طرف میاں مراد ایڈوکیٹ نے کی#

مزید : پشاورصفحہ اول