ایف آئی اے نے سول ایوی ایشن میں جعلی میڈیکل سرٹیفکیٹ کے اجراءکے سکینڈل کی تحقیقات شروع کر دیں

ایف آئی اے نے سول ایوی ایشن میں جعلی میڈیکل سرٹیفکیٹ کے اجراءکے سکینڈل کی ...
ایف آئی اے نے سول ایوی ایشن میں جعلی میڈیکل سرٹیفکیٹ کے اجراءکے سکینڈل کی تحقیقات شروع کر دیں

  

اسلام آباد (آن لائن) ایف آئی اے نے ہوائی جہازوں کے پائلٹ کو جعلی میڈیکل سرٹیفکیٹ کے اجراءکی اعلی پیمانے پر تحقیقات شروع کر دی ہیں ۔ ایف آئی اے کراچی ڈائریکٹوریٹ نے یہ تحقیقات سول ایوی ایشن کے میڈیکل شعبہ کے ذمہ دار ، ڈاکٹروں کے خلاف شروع کی ہیں ۔ آن لائن کو ملنے والی دستاویزات کے مطابق پی آئی اے ، ایئر بلیو اور شاہین ایئر کمپنیوں کے درجنوں پائلٹوں نے جعلی میڈیکل سرٹیفکیٹ حاصل کر کے جہازوں کو اڑانے میں مصروف ہیں ۔ یہ میڈیکل سرٹیفکیٹ سول ایوی ایشن کے شعبہ میڈیکل کے قائم مقام سربراہ ڈاکٹر فہیم الدین کے خلاف شروع کی گئی ہیں ۔ ایف آئی اے نے ڈاکٹر فہیم الدین کی طرف سے اب تک جاری کئے گئے میڈیکل سرٹیفکیٹ کا پورا ریکارڈ چھان بین کا فیصلہ کیا ہے ۔ سول ایوی ایشن کی تاریخ میں جعلی میڈیکل سرٹیفکیٹ کے اجراء کا یہ سب سے بڑا سکینڈل سامنے آیا ہے اور اب تک درجنوں پائلٹوں نے جعلی میڈیکل سرٹیفکیٹ حاصل کر کے جہاز اڑانے میں مصروف ہیں اور سینکڑوں افراد کی زندگیوں کو خطرہ میں ڈال رکھا ہے ۔ ایف آئی اے کے ایک اعلی افسر اظہر علی کو یہ تحقیقات سونپی گئی ہیں ۔ دستاویزات کے مطابق قومی اسمبلی کی پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی نے بھی سول ایوی ایشن میں جعلی میڈیکل سرٹیفکیٹ کے اجراءکی تحقیقات کا فیصلہ کیا ہے ۔ ڈاکٹر فہیم الدین پر بھاری مالی بدعنوانیوں کا بھی الزام عائد کیا گیا ہے جبکہ ان کی پیشہ وارانہ تعلیم وتربیت پر بھی سوالات اٹھائے جا رہے ہیں ۔ ایف آئی اے نے اس ضمن میں ڈاکٹر فہیم الدین اور دیگر سول ایوی ایشن افسران کو طلب کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔

مزید : اسلام آباد