وہ وقت جب شوکت عزیز نے پرویز مشرف کو بے وقوف بنایا،اپنی غلطی نواز شریف پر ڈال دی

وہ وقت جب شوکت عزیز نے پرویز مشرف کو بے وقوف بنایا،اپنی غلطی نواز شریف پر ڈال ...
وہ وقت جب شوکت عزیز نے پرویز مشرف کو بے وقوف بنایا،اپنی غلطی نواز شریف پر ڈال دی

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) سینئر صحافی روف کلاسرا نے اپنے حالیہ کالم میں لکھا ہے کہ وزیراعظم شوکت عزیز نے امریکیوں کے ساتھ ایک خفیہ معاہدہ کیا اور اس کی اطلاع پرویز مشرف کو نہ دی اور جب ان کی اس حرکت کا علم صدر مشرف کو ہوا تو وہ غصہ ہوئے لیکن شوکت عزیز نے چالاکی سے کام لیتے ہوئے اپنی غلطی میاں نواز شریف پر ڈال دی۔

وہ لکھتے ہیں کہ بل کلنٹن پاکستان آئے تو جنرل مشرف نے پاکستان کے ایف سولہ طیاروں کے پانچ سو ملین ڈالر واپس مانگے، مگر جہاز ملے نہ پیسے۔ بل کلنٹن نے نواز شریف صاحب سے یہ ڈیل کی تھی کہ وہ 350 ملین ڈالر کیش اور باقی 150 ملین ڈالر کا سویابین دیںگے۔ جب جنرل مشرف نے یہ معاملہ اٹھایا تو امریکہ بہادر ناراض ہو گیا۔ امریکیوں نے عجیب حرکت کی۔ انہوں نے پی ایل 48 سکیم کے تحت تین لاکھ ٹن گندم پاکستان کو مفت دی تھی‘ جو افغان مہاجرین کو فراہم کی گئی تھی۔ انہوں نے کہا: ''وہ اس گندم کی قیمت ایف سولہ طیاروں والی رقم سے کاٹ لیں گے“۔ صرف یہی نہیں، امریکیوں نے جہاز کا کرایہ تیس ڈالر کے بجائے ستر ڈالر فی ٹن لگا کر ستر ملین ڈالر سے زیادہ کا بل بنا کر نیا معاہدہ پاکستان کو پیش کر دیا۔ وزیر اعظم شوکت عزیز اور وزیر خارجہ عبدالستار نے نیا معاہدہ کر لیا۔ میں نے ڈان میں خبر بریک کی کہ امریکہ نے نئے معاہدے کے تحت ایف سولہ طیاروں کی رقم ا±س گندم کے بل میں ایڈجسٹ کر لی ہے‘ جو تین سال پہلے مفت دی گئی تھی۔ خبرکا چھپنا تھا کہ اسلام آباد میں طوفان آ گیا۔ جنرل مشرف نے اجلاس بلا لیا کہ یہ خفیہ معاہدہ ان سے پوچھے بغیر کیسے ہوا؟ شوکت عزیز نے بھی کچی گولیاں نہیں کھیلی تھیں۔ انہوں نے جھوٹ گھڑا کہ یہ سب نواز شریف صاحب کا کیا دھرا ہے‘ جنہوں نے دسمبر 1998ءکے دورہ امریکہ میں یہ سب مان لیا تھا۔ یوں سارا نزلہ نواز شریف پرگرا دیا گیا‘ حالانکہ انہوں نے ایسی کوئی شرط نہیں مانی تھی۔

مزید : لاہور