بیرون ملک پاکستانی سفارتکار کے بیٹے کی نوعمر لڑکی سے انتہائی شرمناک حرکت، جان کر آپ کو بھی بے حد افسوس ہوگا

بیرون ملک پاکستانی سفارتکار کے بیٹے کی نوعمر لڑکی سے انتہائی شرمناک حرکت، ...
بیرون ملک پاکستانی سفارتکار کے بیٹے کی نوعمر لڑکی سے انتہائی شرمناک حرکت، جان کر آپ کو بھی بے حد افسوس ہوگا

  

نیویارک (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکا میں ایک پاکستانی سفارتکار کے بیٹے کو ایک 13 سالہ لڑکی کی عصمت دری کے الزام میں گرفتار کرلیا گیا ہے، اور امریکی میڈیا کے مطابق نوجوان نے اپنے شرمناک جرم کا اعتراف بھی کرلیا ہے۔

جریدے ڈیلی میل نے امریکی اخبار نیویارک ڈیلی نیوز کے حوالے سے بتایا ہے کہ 20 سالہ محمود الرحمن راحیمون نے برونکس کے علاقے سے تعلق رکھنے والی 13 سالہ طالبہ کے ساتھ اکتوبر میں سوشل میڈیا ایپ whisper کے ذریعے تعلقات کا آغاز کیا۔ دونوں کے درمیان متعدد ملاقاتیں ہوئیں، حتیٰ کہ یکم دسمبر کو محمود الرحمن کمسن طالبہ کو برونکس میں واقعہ ’ریور روڈ موٹر ان‘ نامی جگہ پر لے گیا اور ایک کمرے میں لے جاکر اس کی عصمت دری کرڈالی۔

مزید جانئے: منگنی کے بعد شادی سے چند روز قبل لڑکی نے اچانک انکار کردیا، وجہ ایسی کہ جان کر کوئی بھی داد دینے پر مجبور ہوجائے

ڈیلی میل کے مطابق امریکی پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم سفارتکار محمد مرید راحیمون کا بیٹا ہے، جو کہ حکومت پاکستان کی طرف سے کمیونٹی ویلفیئر کاﺅنسلر کے عہدے پر متعین بتائے گئے ہیں۔ نیویارک ڈیلی نیوز کے مطابق وقوعہ کے وقت طالبہ کی ایک سہیلی کمرے سے ملحقہ باتھ روم میں موجود تھی، جبکہ اس کا باپ سکول کے باہر اسے لینے کے لئے منتظر تھا۔ اخبار کا کہنا ہے کہ جب متفکر والد نے اپنی بیٹی کو سکول میں موجود نہ پاکر فون کیا تو اس کا کہنا تھا کہ وہ پارک میں دوڑ کی پریکٹس کررہی ہے اور جلد واپس آجائے گی۔ پولیس کے مطابق بعدازاں متاثرہ لڑکی کی سہیلی نے اس کے والد کو اصل ماجرا بتادیا، جس کے بعد پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے ملزم کو گرفتار کرلیا۔

ڈیلی میل کے مطابق ملزم کی بہن کا کہنا ہے کہ ان کے لئے یہ بات ناقابل یقین اور کسی بڑے صدمے سے کم نہیں ہے۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ ان کا بھائی ویسٹ چیسٹر کمیونٹی کالج کا طالبعلم ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس